بلاول بھٹو زرداری کا استور میں عوامی جلسے سے خطاب ،توپوں کا رُخ وزیر اعظم عمران خان کی طرف۔

استور(ٹی این این)پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے گلگت بلتستان کے عوام سے مخاطب ہوتے ہوئے کہا ہے کہ آپ نے کشمیری بھائیوں کے ساتھ مل کر لڑنا ہے۔ کشمیر پر حملہ اصل میں مسلم امہ اور اقوام متحدہ پر حملہ ہے۔ کٹھ پتلی وزیراعظم نے کشمیر کا مقدمہ لڑنے کی اہلیت نہیں ہے۔ یہ کٹھ پتلی کشمیر کا مقدمہ لڑنے کی بجائے سیاسی مخالفین کو جیلوں میں بند کر رہا ہے۔ میں شہید بینظیر بھٹو کا بیٹا ہوں کسی کٹھ پتلی سے ڈرنے والا نہیں۔ ہمارے ساتھ جو مرضی کرلو برداشت کر لیں گے مگر عوام کے ساتھ زیادتی برداشت نہیں کریں گے۔ لوگوں کو نوکریاں دینے کا وعدہ کرنے والا نوکریاں چھین رہا ہے۔ گھر دینے کا وعدہ کرنے والا عوام سے چھتیں چھین رہا ہے۔ غریب عوام کا معاشی قتل کیا جا رہا ہے۔ ہر چیز پر ٹیکس لگا کر غریب عوام کا معاشی قتل کیا جا رہا ہے ہمیں سلیکٹڈ نہیں الیکٹیڈ وزیراعظم چاہیے جو وعدے پورے کرے۔ ہم سب نے مل کر کٹھ پتلی وزیراعظم کو نکالنا ہے۔ چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو نے استور میں عوام سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کشمیر کا مقدمہ بھٹو شہید کے فلسفے کے مطابق لڑیں گے۔ انہوں نے کہا کہ نواز شریف میرا سیاسی مخالف ہے لیکن سیاسی مخالف کو بلیک میل کرنا بزدلی ہے۔ ستر سالہ نواز شریف بیٹی سمیت جیل بھیجنا بزدلی ہے۔ میں عید پر کشمیریوں کو سپورٹ کرنے جا رہا تھا مگر نیازی نے فریال تالپور کو عید کی رات کو ہسپتال سے بستر بیماری سے اٹھا کر جیل میں ڈال کر قومی اتحاد پر کلہاڑا چلایا۔ چیئرمین پیپلزپارٹی نے کہا کہ اب تک گلکت بلتستان کو جتنے بھی حقوق ملے ہیں پیپلزپارٹی کی حکومت میں ملے ہیں۔ بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ پیپلزپارٹی کی حکومت جلد آرہی ہے اور انشااللہ آپ کے باقی حقوق بھی پیپلزپارٹی ہی دے گی۔ انہوں نے کہا کہ ہماری حکومت میں سیلاب، دہشتگردی سمیت کئی چیلنجز تھے۔ عوام کی منتخب حکومت نے تمام چیلنجز کا مقابلہ کیا۔ ملازمین کی تنخواہوں ، پنشنوں میں اضافہ، بینظیر انکم سپورٹ پروگرام اور کسان اور مزدوروں کو ریلیف دیا۔ لیڈی ہیلتھ ورکرز کا منصوبہ بھی پیپلزپارٹی نے دیا تھا۔ چیئرمین پیپلزپارٹی نے کہا کہ پیپلزپارٹی روزگار کے لئے اور غربت کے خاتمے کے لئے نئے اقدامات اٹھائے گی اور پرانے پروگرام بھی جاری رکھے گی۔ بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ محترمہ بینظیر بھٹو شہید کے لئے عوام نعرے لگاتے تھے کہ بینظیر آئے گی، روزگار لائے گی۔ انہوں نے کارکنوں سے کہا کہ آپ سب لوگوں کو محترمہ بینظیر بھٹو شہید کا تیر بننا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہمارا جلسہ اسکردو میں ہو رہا ہے نااہل وزیراعظم بولے یا نہ بولے مگر میں اسکردو کے جلسے میں کشمیر کے حوالے سے واضح پیغام دوں گا۔

About TNN-GB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc