نگر گپہ ویلی روڑ کا کام صرف دس دن کے اندر اڑھائی کلومیٹر پر مکمل ، اگلے دو ہفتے کے اندربقیہ پانچ کلومیٹرپر بھی روڑ کی تعمیر کام مکمل ہو جائے گا۔ چئیر مین ایل ایس او محمد اسماعیل تحسین

نگر ( تحریر نیوز) صرف دس دن کے اندر اڑھائی کلومیٹر پر گپہ ویلی روڑ کا کام مکمل ابھی اگلے دو ہفتے کے اندربقیہ پانچ کلومیٹرپر بھی روڑ کی تعمیر کام مکمل ہو جائے گا۔ چئیر مین ایل ایس او محمد اسماعیل تحسین کا عمائدین کو یقین دہانی۔ تٖفصیلات کے مطابق گپہ ویلی کے لئے ایک دس دن قبل رابطہ سڑک کا تعمیراتی کام ایل ایس او شینبر کی سرپرستی میں شروع کیا گیا تھا جس پر مسلسل کام کے سبب اڑھائی کلومیٹر پر کام مکمل ہو گیا ہے۔ کام کی رفتار اور معیار کے حوالے عمائدین چھلت چھپروٹ سے ایک غیر رسمی گفتگو کے دوران بروشکی ویلی میں رابطہ سڑک کے کام کے مقام پر انہوں نے کہا کہ علاقے کے بذرگوں اور نوجوانوں کا اس اہم کام میں بڑھ چڑھ کر حسہ لینا نہایت خوش آئند ہے ہم امید کرتے ہیں کہ ہم ریکارڑ مدت (تین ہفتے )کے اندر چھہ کلومیٹر روڑ سیاحتی مقام گپہ ویلی تک مکمل کرانے میں کامیاب ہونگے۔ اس روڑ کی تعمیر میں محکمہ سیاحت گلگت بلتستان اور ضلع نگر کے ضلعی سربراہ رانا محمد وقاص انور اور معروف سماجی کارکن شیخ اختر حسین کا کردار بھی نہایت اہمیت کا حامل ہے۔ ضلعی ایڈمنسٹریشن کے سربراہ کی حیثیت سے رانا محمد وقاص انور اور محترم اسسٹنٹ کمشنر نگر محترم محمد شاہ رخ چیمہ کے خصوصی دلچسپی کے باعث اس روڑ پر کام فوری اور تسلی سے ممکن ہو سکا ہے۔ اس روڑ کے حوالے سے ضلع نگر کے دونوں محترم آفیسران کی کارکردگی کو یاد رکھا جائے گا۔ سوال یہ بھی بنتا ہے کہ سرکاری طور پر محض ایک یا دو کلومیڑ پر رور تعمیر کرنے کے لئے کروڑوں روپے خرچ لئے جاتے ہیں اس کے باوجود بھی روڑ اپنی ماہیت مدت اور معیار کے لحاظ سے تعمیر نہیں ہوتا ہے،لیکن محض چند لاکھ روپے کے عوض اور صرف تین ہفتوں کے ریکارڑ مدت میں ایک نجی تنظیم کی نگرانی میں روڑ کا مکمل ہونا حکومتی اداروں اور پالیسی سازوں کے لئے ایک چیلینج ہے۔ حکومتی اداروں کو چاہیئے کہ آئندہ کسی بھی تعمیراتی کام کے سلسلے میں عوامی نمائندوں اور سماجی کارکنان کو اعتماد میں لیں تاکہ عوامی مفاد کے منصوبے بر وقت ،مکمل عوامی مفاد میں اور اپنی مقررہ معیار کے مطابق تکمیل تک جا سکیں۔

About admin

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc