پاکستان جونئیر تھرو بال ٹیم کی کھلاڑی سیدہ مہوش کرن بلتستانی سخت مشکلات میں امداد کی منتظر

سکردو(ٹی این این) گلگت بلتستان چھوڑبٹ سے تعلق رکھنے والی سیدہ مہوش کرن پاکستان جونئیر تھرو بال ٹیم کے کھلاڑی ہے ان کو سپانسر نہ ملنے کی وجہ ملائیشیا میں ہونی والی تھرو بال چمپیئن لیگ میں جانے کا امکان ناممکن بن چکا ہے اس ماہ کے پچیس تاریخ تک تھرو بال انتظامیہ نے ان کو اپنا سپانسر لانے کی ہدایت کی ہے مگر جو تاریخ دیا گیا تھا اب تک سپانسر شپ کیلئے دو لاکھ پچاس ہزار روپے نہیں مل سکا جس کی وجہ ان کا خواب پورا نہیں ہورہا ہے اور گلگت بلتستان اور ملک کا نام روشن کرنے کا عزم لیکر تھرو بال میں نام کمانے کیلئے دن رات ایک کرکے جو محنت کیا جارہا ہے وہ بھی ضائع ہو رہی ہے اور سیدہ مہوش کرن کراچی میں پیدا ہوئی اور تھرو بال کی کھلاڑی ہے سکول لیول پر بہت سے تمغے سرٹیفکیٹ اور کپ جیتے ہیں اور سپانسر شپ چاہیے جو کی بدقسمتی سے ابھی تک کہیں سے بھی نہیں ملا والدین محنت مزدوری کرنے والے ہیں وہ خود  سے اتنی بڑی رقم پورا کرنے کیلئے گنجائش بھی نہیں رکھتے ہے چند سماجی کارکنوں نے ہر سطح پہ کوشش کی سپانسر کے لیے پر کسی نے بھی مدد نہیں کی سوا تسلی دینے کے آگر سپانسر شپ نہیں ملی تو ایک اور گلگت بلتستان کی ٹیلینٹ پھر سے ہمیشہ کے لیے مجبوری کی ہاتھوں مٹی تلے دفن ہو جائے گی جبکہ صوبائی حکومت گلگت بلتستان نے بھی اپ تک اس ہونہار کھلاڑی کیلئے تھوڑا سا رقم امداد نہیں کیا گیا ہے

About TNN-ISB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc