ڈسٹرک ہیڈکوارٹر سکردو ہسپتال کے ڈاکٹروں کا ہڑتال ،مریض اور عوام سڑکوں پر نکل آئے۔

سکردو(ٹی این این) ڈسٹرک ہیڈکوارٹر ہسپتال سکردو جہاں بلتستان کے چاروں اضلاع کے مریضوں کو سال بھر رش رہتا ہے۔ ہسپتال میں سہولیات کی عدم دستیابی اور مریضوں کو ڈاکٹروں کی جانب سے اپنے نجی دوا خانوں کی طرف ریفر کرکے علاج کے نام پر کھال اُتارنے کی خبریں سال بھر کا مسلہ ہے ۔مسلسل عوامی شکایات اور ڈاکٹروں کی اس من مانی کو دیکھ کر گزشتہ روز کمشنر بلتستان نے ڈاکٹروں کی حاضری رجسٹر روزانہ کی بنیاد پر چیک کرنے کی ذمہ داری ضلعی تحصلیدار کو سونپ دی تھی جسے ڈاکٹر اپنی توہین سمجھتے ہیں۔
گزشتہ دو روز سےڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال سکردو میں ڈاکٹروں اور پیرا میڈیکل سٹاف کی ہڑتال سے تنگ مریضوں اور تیمارداروں نے بھی آج سکردوہسپتال روڈ پر احتجاج شروع کر دیا، مریضوں کے ہڑتال کی خبر سوشل میڈیا پر وائرل ہوتے ہی شہر بھر سے سیاسی اور سماجی شخصیات نے مریضوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کیلئے ہسپتال روڈ پہنچ گئے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہہڑتال کے باعث کس بھی مریض کی جان چلی جائے تو ہڑتال کرنے والے ڈاکٹروں کے خلاف ایف آئی آر درج کرائی جائے گی ۔عوامی حلقوں کا کہنا ہے کہ ڈسٹرک ہیڈکوارٹر ہسپتال کے ڈاکٹروں کو جب اپنی ذمہ داریوں کا احساس نہ ہو اور سرکاری سے تنخواہ لیکر ذاتی کلینک میں ذیادہ وقت گزارنے میں لگ جاتے تو حکومت کی ذمہ داری بنتی ہے کہ اُن کو ڈیوٹی پر پابند کریں اور تحصیلدار کے زریعے حاضر ی چیک کر نے کا عمل اچھا اقدام ہے لیکن حاضری بہتر بنانے کے نظام پر ڈاکٹروں کا احتجاج کرنا سمجھ سے بالاتر ہے

About TNN-GB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc