تازہ ترین

ضلع نگر کے قصائیوں نے حکومتی احکامات ماننے سے صاف انکار کردیا۔

نگر ( ٹی این این) ٹائون ایریاء تحصیل چھلت میں عوام گوشت کے لئے ایک دوسرے کو پچھاڑنے لگے، اسسٹنٹ کمشنر نگر سامہ مجید چیمہ کا سستا رمضان بازار کا دورہ ۔تفصیلات کے مطابق رمضان المبارک میں گوشت حاصل کرنے کے لئے کمرشل ایریاء کی بڑی آبادی کے ساتھ کے کے ایچ نگر اور نشیبی ہنزہ سے بھی عوام کی بڑی تعداد چھلت ٹائون آتی ہے جس سے گوشت کی دکانوں پر انتہائی رش ہوتا ہے۔جبکہ دوسری طرف ضلعی انتظامیہ نے چھوٹا گوشت کے نرخ 550سے بڑھا کر 700 روپے کئے ہیں جس سے چھوٹے گوشت کے قصائیوں کی موجیں ہو رہی ہیں جبکہ بڑا گوشت 350سے صرف20 روپے بڑھا کر 370 روپے فی کلو کرنے پر قصائیوں نے عوام کو گوشت فراہمی معطل یا نرخ بڑھا کر فراہم کر رہے ہیں ۔قصائیوں کا موقف ہے کہ ہم مل مویشی خریدنے مالکان سے بات کرتے ہیں تو مالکان ہمیں 400روپے کلو کے لحاظ سے اپنے جانورکا رقم مقرر کرتے ہیں ،اب ہم اتنا خسارہ کیسے برداشت کرسکتے ہیں ۔ قابل ذکر بات یہ ہے کہ ضلعی انتظامیہ نگر نے قصابوں کے ساتھ کئی دنوں کے مذکرات کے بعد چھوٹے ،بڑے گوشت اور اجڑی کی الگ فروخت کے لئے نرخنامہ مقرر کیا ہوا ہے ۔ عوامی مطالبے پر ضلع نگر سے باہر مال مویشی لے جانے پر مکمل پابندی عائد کی گئی ہے تاکہ گوشت کی دستیابی یقینی بنائی جائے ۔ قصابوں نرخنامہ آویزاں تو کیا ہے لیکن نرخ کوئی اور لیتے ہیں عوام کو ماہ مقدس میں گوشت رات کا کھانے اور سحری کے لئے لازمی ہوتا ہے اس لئے مقررہ نرخوں سے زیادہ ادا کرنے پر مجبوری سے راضی دکھائی دیتے ہیں۔جبکہ دوسری جانب اسسٹنٹ کمشنر نگر نے میں کمرشل ایریاء میں قائم رمضان سستا بازار کا دورہ کیا اور وہاں پر دستیاب تمام اشیاء کا معائینہ بھی کیا ہے ۔ عوامی حلقوں نے اسسٹنٹ کمشنر سے مطالبہ کیا ہے کہ سابقہ روایات کی مانند کمرشل ایریاء میںقصائیوں کی سالانہ رجسٹریشن کے لئے ٹیندر طلب کئے جائیں اور رجسٹرڑ قصائیوںکو گوشت فراہم کرنے کی اجازت دی جائے جبکہ ان کی سہولت کے لئے فوری طور پر قصاب خانہ بھی قائم کیا جائے تاکہ گوشت فراہمی کے لئے ایکبار ہمیشہ ہمیشہ کے لئے قانون بن جائے۔

About TNN-GB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*