تازہ ترین

گلگت بلتستان سے تعلق رکھنے والے چالیس مختلف سیاسی صحافتی اور سماجی شخصیات کا نام فورتھ شیڈول سے خارج۔

گلگت(ٹی این این) محکمہ داخلہ گلگت بلتستان نے انسداد دہشت گردی ایکٹ اےٹی اے 1997 کے تحت مقدمات کا سامنا کرنے والے 40 افراد کے نام شیڈول فورتھ سے خارج کردیے۔ اعلامیے کے مطابق تمام ڈویژنز کے ڈویژنل ریویو/ انٹیلی جنس کمیٹیوں کی سفارشات اور صوبائی ریویو/ انٹیلی جنس کمیٹی کی منظوری سے 40 افراد کے نام فوری طورپر شیڈول فورتھ سے خارج کیے گئے ہیں تاہم ان کی نگرانی ایک سال تک جاری رہے گی۔ اس دوران اگر کوئی ایک شکایت بھی موصول ہوئی تو ڈویژنل ریویو/ انٹیلی جنس کمیٹی انہیں دوبارہ شیڈول فورتھ کے لیے نامزد کرےگی جس پر متعلق ڈپٹی کمشنر اس وقت نوٹس جاری کریں گے۔نوٹی فکیشن کےمطابق شیڈول فورتھ سے نکالے گئے 40 میں یاسین کے 9 سمیت 12 افراد کا تعلق ضلع غذر سے ہےجبکہ 14 کا تعلق گلگت کے مختلف علاقوں، تین کا نگر، ایک کا ہنزہ،ایک استور، چھ دیامر،ایک گانچھے، دو افراد کا تعلق بلتستان ریجن سے ہے۔غذر سے تعلق رکھنے والے معروف صحافی و پبلشردولت جان، المعروف ڈی جےمٹھل اور بی این ایف غذر کے سیکریٹری جنرل قیوم خان،مولانا رشید اللہ، تیمور اقبال، میرباز،فاروق، علی احمد جان، سہیل کمال، شیخ محمد علی، طاہر علی طاہر،قیوم،شمس اللہ، مولانا عبدالوکیل، مولانا فرمان اللہ، مولانا مبین الحق، غلام دستگیر، امتیاز، محمد علی، اسلم، وزیر شفیع، عابد حسن، عطاء اللہ، مولانا عبدالباری، جمعہ میر، شاہین، مایون خان، امیر حیات، محمد سلیم، شکور خان، نظرب شاہ، نور اکبر، گلفراز، شاہ فراز، ناصر کریم، اعجاز بلتی، محمد آصف اور محمد حسن شامل ہیں۔ گلگت بلتستان کے معروف قوم پرست رہنما انجینئر منظور حسین پروانہ،مجلس وحدت المسلمین گلگت بلتستان کے سیکرٹری جنرل آغا علی رضوی،سابق قوم پرست رہنما شہزاد آغا،شگر کریمی اور قوم پرست ایکٹوسٹ شبیر مایار سمیت کئی افراد تاحال شامل ہیں۔ اس مقدمے میں قیوم خان جولائی 2016 اور دولت جان کو اکتوبر 2016 میں گرفتار کرکے ڈھائی سال بعد رہا کیا گیا۔ بوبر سے تعلق رکھنے والے طاہر علی کو بھی گرفتارکیاگیا تھا۔ رواں سال اپریل میں بی این ایف حمیدگروپ پر پابندی بھی لگادی گئی ہے جبکہ غیرمصدقہ اطلاعات کے مطابق عبدالحمید خان اپنی خودساختہ جلاوطنی ختم کرکے واپس آچکےہیں اور گزشتہ تین ماہ سے اسلام آباد میں رہائش پذیر ہیں۔

About TNN-GB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*