محکمہ تعلیم ضلع نگر کا انداز نرالا،ایک ہی محکمے کے اندر گریڈ اُنیس کے آفیسر کا ایک گریڈ کم کرکے کم گریڈ والے افیسر کے ماتحت کام کرنے کا حکم نامہ جاری کردیا۔

نگر ( اقبال راجوا) انیسویں سکیل کے حاضر سروس ADIنگر علی حیدر کی موجودگی کے باوجود اس سے کم سکیل کے آفیسر کو DDضلع نگر تعینات کرنا سوالیہ نشان ہے۔ نگر میں عوامی حلقوں نے میڈیا نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے سیکریٹری تعلیم سے مطالبہ کیا ہے کہ یہ عجیب بات ہے کہ ایک ہی محکمے کے اندر ایک انیسویں گریڈ کے آفیسر کو ایک گریڈ کم آفیسر کے ماتحت کام کرنے کے احکامات دیئے گئے ہیں۔آخر ایسی کیا مشکلات ہیں کہ تعلیم جیسے اہم ترین شعبے میں اس طرح کے غیر سنجیدہ اقدامات لئے جا رہے ہیں عوامی حلقوں کا کہنا ہے کہ محکمہ تعلیم کے حکام بالا ایک طرف سرکاری سکولوں اور دیگر تعلیمی اداروں میں معیاری تعلیم کے فقدان کا رونا روتے نہیں تھکتے ہیں جبکہ دوسری طرف اندرون محکمہ اس طرح کے غیر منصفانہ اقدامات سمجھ سے بالا ہیں۔ اگر معیار تعلیم کو سرکاری اداروں میں قائم کرنا ہے اور عوام کے اعتماد کو سرکاری تعلیمی اداروں پر بحال کرنا ہے تو ہرتدریسی عملے کے ساتھ انتظامی طور پر بھی میرٹ کے لحاظ سے فیصلے کرنا ہوں گے اور میرٹ پر فیصلے کرنے کے بعد ان فیصلوں کی روشنی میں بہتر نتائج کی امید رکھنے کے لئے اعلی اہلکاروں کو اپنی زمہ داری سے کام کرنے کی یقین دہانی لازمی کرنا ہوگی۔ اگر فیصلے اپر سے نیچے اور نیچے سے اپر کئے جائیں گے تو ادارے کے اندر ہی ملازمین میں زمہ داریوں کا خلفشار پیدا ہوگا اور سینئیر جونئیر کے مسائل پیدا ہو سکتے ہیں۔ اس لئے نگر کے عوامی حلقوں کا مطالبہ ہے کہ ڈپٹی ڈائیریکٹر نگر اپنے مکمل میریئٹ اور سینئیارٹی کے اعتبار سے تعینات کیا جائے تاکہ سرکاری سکولوں کے مسائل حل کے لئے ڈپٹی ڈائیریکٹر پورے اعتماد کے ساتھ اپنے ماتحتین کے ساتھ منصوبہ بندی کر سکے۔

About admin

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc