تازہ ترین

صحافی مطلوب موسوی کی گمشدگی، گلگت بلتستان کے صحافیوں میں شدید تشویش اعلیٰ حکام سےبازیاب کرانے کا مطالبہ۔

کراچی(ممتازشگری سے) گلگت بلتستان پروفیشنل جرنلسٹ فورم کے وفدکی اینکرپرسن منہاج موسوی سے ملاقات۔اُن کے بھائی رپورٹر مطلوب موسوی کی جبری گمشدگی کے بارے میں تفصیلی گفتگو۔ جی بی پی جے ایف کاحکومت سے جلدرہائی کیلئے اقدامات کرنے کامطالبہ۔ تفصیلات کے مطابق گلگت بلتستان پروفیشنل جرنلسٹ فورم کے صدرعبدالحسین آزاد، پریس سیکریٹری ممتازشگری،اخترحسن،عبدررحیم اورعرفان فرازنے اینکرپرسن منہاج موسوی سے تفصیلی ملاقات کی ملاقات میں اُن کے سگے بھائی مطلوب موسوی کی جبری گمشدگی کے بارے میں گفتگوہوئی گفتگوکرتے ہوئے منہاج موسوی نے کہاکہ ان کے بھائی جوکہ روزنامہ جنگ سے منسلک ہے ان کورات سے دوبجے گھرسے اغواکیاگیا۔ ساتھ ہی انہوں نے اہل خانہ سے بھی بدتمیزی کیآغواہ کرنے والے سیکورٹی اداروں کے گاڑی میں تھے ساتھ ہی دواوربھی گاڑیاں تھی۔ سوشل میڈیاپرمذہبی رنگ دے کرپوسٹیں شیئرکرنے متعلق ان کاکہناتھاکہ ان کاکسی مذہبی تنظیم سے کوئی تعلق نہیں۔ لہذاانہیں کسی مذہبی تنظیم سے منسلک نہ کیے جائیں ان کامزیدکہناتھاکہ اگربھائی نے کوئی جرم کیاہے توانہیں عدالت میں پیش کیے جائیںتاکہ واضح ہوسکیں انہیں کس جرم میں گرفتارکیاگیاہے۔انہوں نے اعلی حکام سے مطالبہ کیاہے کہ میری اہل خانہ ان کی جبری گمشدگی سے سخت پریشان ہے لہذاانہیں جلدرہاکیے جائیں یاکسی جرم کی صورت میں عدالت میں پیش کیے جائیں گلگت بلتستان پرفیشنل جرنلسٹ فورم کے وفودنے یقین دلایاکہ مشکل کی اس گھڑی میں ہم ان کے ساتھ کھڑےہیں, اوران کی رہائی کیلئے ہرسطح پرآوازبلندکریں گے ۔انہوں نے بھی اعلی حکام سے محاطب ہوتے ہوئے کہاکہ ادارے صحافیوں کے ساتھ ظلم بندکریںاسطرح صحافیوں کی جبری گمشدگی سے پوری صحافی برادری خوف کاشکارہوگئے ہیں انہوں نے صحافی مطلوب موسوی کی رہائی کامطالبہ کرتے ہوئے کہاکہ وزیراعلی سندھ سمیت تمام اعلی حکام سے گزارش ہے کہ مذکورہ صحافی کوجلدبازیاب کرائے جائیں اوراگران سے کوئی غلطی سرزردہوئی ہے توانہیں عدالت میں پیش کیے جائیں انہوں نے ان کی بروقت بازیابی نہ ہونے کی صورت میں احتجاجی مظاہرہ کرنے کی دھمکی دے دی ہے۔

About TNN-GB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*