ہنزہ مسگر پاور پراجیکٹ محکمہ برقیات اور ٹھیکیدار کی ملی بھگت سے نہ صرف تاحال مکمل نہیں ہو سکا بلکہ تعمیر شدہ کام بھی غیر معیاری ہونے کے باعث ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہیں۔

ہنزہ( تحریر نیوز) ہنزہ مسگر کے مقام پر 2006 میں شروع ہونے والا پاور پراجیکٹ مکمل ہونے سے پہلے ہی تباہ حالی کا شکار ہو گیا ، پاور ہاؤس اورواٹر چینل کی تعمیر میں ناقص مٹیریل کے استعمال سے واٹر چینل اور پاو رہاؤس کی عمارت میں دراڑیں پڑ چکی ہیں جو کسی بھی وقت گرسکتا۔ 2006میں شروع ہونے والا یہ پراجیکٹ محکمہ برقیات اور ٹھیکیدار کی ملی بھگت سے مکمل ہونا تو دور کی بات بلکہ تعمیر شدہ کام بھی غیر معیاری ہونے کے باعث ٹوٹ پھوٹ کے شکار ہیں ، گزشتہ سال وزیر اعلیٰ نے دورہ گوجال مسگر کے دوران اس وقت کے ایگزیکٹیو انجینئر برقیات نے وزیر اعلیٰ کو اپنے بریفنگ میں یقین دلایا تھا کہ یہ منصوبہ گزشتہ سال دسمبر میں مکمل ہوگا مگر محکمہ برقیات کے حکام کی وزیر اعلیٰ کو بریفنگ جھوٹ ثابت ہوگئی لیکن کوئی ایکشن لینے والا نہیں۔

دوسری مرتبہ گورنر نے مسگر پاور پراجیکٹ کے دورے کے موقع پر اس سال دسمبر تک منصوبے کو مکمل کرنے کا حکم نامہ جاری کیا تھا لیکن اُنکے احکامات پر بھی عمل ہوتا دکھائی نہیں دے رہا۔ ہنزہ کے عوام نے وزیر اعلیٰ اور چیف سیکریٹری سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ مسگر پاور منصوبے کی ناقص تعمیرات کا نوٹس لیکر ذمہ داران کے خلاف کارروائی کرے اور بروقت تکمیل کو یقینی بنائیں ۔

About admin

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc