تازہ ترین

مناور جیل گلگت کے تعمیراتی کام مکمل کئے بغیر قیدیوں کو شفٹ کرانے کا انکشاف۔

گلگت(تحریر نیوز نیٹ ورک) حکومت کی جانب سے گلگت مناور جیل کی تعمیراتی کام مکمل کئے بغیر سونی کوٹ قدیم جیل سے قیدیوں کو نئے جیل میں شفٹ کرانے کی تیاریوں کا انکشاف ہوا ہے۔ ذرائع کے مطابق مناور جیل کا ٹھیکدار سلطان محمود وزیر اعلیٰ حافظ حفیظ الرحمن کا قریبی ساتھی اور فرنٹ مین ہے، کہا یہ جارہا ہے کہ نئے جیل کی تزین آرائش سمیت بہت سے کام ابھی ہونا باقی ہے یہاں تک کہ کھڑکیوں کے شیشے تک بھی  نہیں لگائے گئے ہیں۔ لیکن قیدیوں کو سخت سردی کے اس عالم میں نامکمل جیل میں شفٹ کراکر ٹھیکدار کو فائدہ پونچانے کے ساتھ دیگر مقاصد کیلئے جلدی بازی میں سارا کام کیا جارہا ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ وزیر اعلیٰ اپنے قریبی دوست کے گلگت کا قدیم دو سو سالہ تاریخیعمارت (سونی کوٹ جیل) ہاشوانی گروپ کو دینا چاہتا ہے اور اس قدیم تاریخی ورثے کو محفوظ بناکر قومی میوزیم بنانے کے بجائے کمیشن اور کرپشن کا بھینٹ چڑھایا جارہا ہے۔
حکومت کو چاہئے انسانی حقوق کا ذرا بھی خیال کریں اور اپنے قریبی رفقاء کو فائدہ پونچانے کے چکر میں قیدیوں کے ساتھ یہ ظلم نہ کریں اور سونی کوٹ قدیم جیل کو قومی ورثے کے طور پر محفوظ بنانے کیلئے محکمہ آثار قدیمہ کے حوالے کریں۔
یاد رہے گلگت مناور جیل گلگت بلتستان کا سب سے بڑا جیل ہے اور اس جیل کی تعمیر کا پراجیکٹ پر چا لیس کر و ڑ رو پےپر منظور کرا کر اب بڑھا کر ایک ارب کے قریب لگ بھگ خرچہ آنے کا امکان ہے، اس جیل میں 500سے زا ئد قیدیو ں کی گنجا ئش ہے اورسیکو ر ٹی کے صورت حال کو ملحو ظ خا طر رکھتے ہو ئے 12سے 16فٹ او نچی دیو ا ریں ،سینٹر ل واچ ٹا و ر اور 7بیر کس تعمیر کیہے جس میں A,Bاور Cکلا س کے قید ی رکھے جا ئیں گے۔

About TNN-GB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*