سکردو انٹر سٹی روڈ میٹلنگ منصوبے پر اچانک کام رکوانے کے خلاف سول سوسائٹی اور بلتستان یوتھ آلائنس کی احتجاجی ریلی۔ فورا کام شروع کرنے کا مطالبہ ۔

سکردو( نامہ نگار) سکردو کی تمام داخلی سڑکیں گزشتہ کئی سال سے ویران قبرستان کا منظر پیش کر رہا ہے، اس حوالے سے سول سوسائی اور بلتستان کے عوام نے کئی بار اپنی مدد آپ کے تحت کھنڈرات کی بھرائی کیلئے عوامی مہم بھی چلائے۔ سوشل میڈیا پر سکردو گلگت اور سکردو انٹر سٹی روڈ کی خستہ حالی کے حوالے سے لوگوں نے زمین آسمان ایک کیا ہوا ہے۔ یہی وجہ تھی کہ حکومت نے تین ستمبر کو انٹر سٹی روڈ میٹلنگ منصوبے کا باقاعدہ افتتاح کیا۔ لیکن روڈ میٹلنگ کے قواعد ضوابط کو پس پشت ڈال اس کام کر شروع کرنے پر سوشل میڈیا پر لوگوں نے حکومت کے اس اقدام کو آڑے ہاتھوں لیکر اسے کرپشن کا نیا طریقہ ایجاد قرار دیا۔ دوسری طرف ذرائع کے مطابق  چیف سکریٹری کو شکایت ملی تھی کہ منصوبے کا ٹھیکہ غیر قانونی طریقے دیا گیا ہے جس پر انہوں نے سکریٹری تعمیرات کو حکم دیکر سکردو شہر کی سڑکوں کی میٹلنگ منصوبے کو تحقیقات کیلئے روک دیا تھا۔

اچانک کام روکنے کی وجہ سے علامہ شیخ محمد حسن جعفری نے گزشتہ جمعے کے خطبے میں اس امر کو بلتستان کے خلاف سازش قرار دیتے ہوئے حکومت کو بلتستان دشمنی پر کڑی تنقید نشانا بھی بنایا تھا۔ آج سول سوسائٹی بلتستان اور بلتستان یوتھ الائنس کی جانب سے کرپشن روکو کام نہ روکو کے عنوان سے سکردو میں احتجاج کرکے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ انٹر سٹی روڈ میٹلنگ منصوبے پر فورا دوبارہ کام شروع کیا جائے۔

About admin

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc