ضلع کھرمنگ میں نئی حلقہ بندی سے پہلے غاسنگ تا ہلال آباد کو الگ یونین کونسل کا درجہ دیا جائے۔

کھرمنگ(پ،ر) ڈسٹرک کھرمنگ کی اعلان کے بعد نئی حلقہ بندی ہونا باقی ہیں۔ یوتھ لیڈران غاسنگ،منٹھوکھا مادھوپور،گوہری اور ہلال آباد کے مطابق اُن کےعلاقے میں نظام زندگی کے تمام معاملات مشترک ہونے کے باوجود دو طاقتور یونین کونسلز مہدی آباد اور طولتی کے درمیان پھنسے ہوئے ہیں۔ یہ علاقے سیاحتی حوالے سے نہایت اہمیت کے حامل ہیں،لیکن منقسم ہونے کی وجہ سے سوشل ڈولپمنٹ کے حوالے ظلم کے شکار ہیں، اور نہ ہی یہاں کی سیاحت پر توجہ دیا جارہا ہے۔ تمام تر معاشرتی معاملات مشترک ہونے کے باوجود منٹھوکھا اور غاسنگ کو یونین کونسل مہدی آباد میں جبکہ مادھوپور گوہری اور ہلال آباد کو یونین کونسل طولتی میں شامل کیا ہوا ہے، اس وجہ سے اس علاقے کے عوام کی ہر سطح پر حق تلفی ہورہی ہے کیونکہ ایک طرف مہدی آباد اور دوسری طرف طولتی سیاسی اور سرکاری طور پر اثررسوخ والے مانے جاتے ہیں۔یہی وجہ ہے کہ سرکاری فنڈز سے لیکر نوکریوں کے حصول تک کے معاملات میں یہ علاقے دو طاقتور یونین کونسلز کی چکی میں پس رہے ہیں۔

سرکاری میپ میں بھی ان علاقوں کی اپنی تارٰیخی حیثیت اور پہچان ہونے کے باوجود مہدی آباد اور طولتی والوں نے اپنا محلہ ڈیکلیر کیا ہوا ہے جو کہ اس علاقے کی شناخت کو مسخ کرنے کے مترادف ہیں۔

ڈپٹی کمشنر کھرمنگ کو چاہئے کہ اس حوالے سے چانچ پڑتال کریں کیونکہ آبادی کے تناسب سے بھی یہ علاقے ایک یونین کونسل سے کہیں ذیادہ وسیع ہیں۔ لہذا غاسنگ تا ہلال آباد کے مسائل کا ایک ہی حل الگ یونین کونسل ہے تاکہ اس علاقے میں سیاحت کو ذیادہ سے ذیادہ فروغ دیا جاسکے اور اس بڑھ کر دہائیوں سے غصب شدہ حقوق ان علاقوں کو ملے تاکہ یہاں کے عوام بھی طولتی اور مہدی آباد کیطرح کے سہولیات سے مستفید ہوسکے۔

About admin

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc