تازہ ترین

ضلع نگر کے عوام صاف پانی کو ترس گئے، ندی میں نالے کی گندے پانی کی ملاوٹ سے بیماریاں پھوٹ پڑنے کا خدشہ۔

نگر ( بیورو رپورٹ) فایا صاف پانی میں نالے کے گدلے پانی کی ملاوٹ نے ٹائون ایریاء کی عوام کو مختلف بیماریوں میں مبتلا کر دیا۔ نگر ٹائون ایریاء چھلت بالا ،چھلت پائین ،سونیکوٹ ،اکبر آباد اور رابٹ پائین کی عوام کا مطالبہ ہے کہ فایا چشمے کے صاف پانی میں نالے کا گدلا پانی ملانا بند کیا جائے ۔ تفصیلات کے مطابق گزشتہ تین ہفتوں سے فایا واٹر سپلائی پر تعینات ملازمین نے پانی کی کمی کا بہانہ بناتے ہوئے کہا ہے کہ فایا چشمے کا پانی زمین میں دب کر نشیبی حصوں میں نکلتا ہے جس کے کھدائی کرنا ہے اس کے بغیر صاف پانی علاقے کی دور دراز علاقوں میں نہیں پہنچ پاتا جس کے پانی کی کمی کو دور کرنے کے لئے مجبوراً نالے کا گدلا پانی شامل کیا گیاہے۔ عوامی حلقوں نے واٹر سپلائی پر تعینات ملازمین کے اس بہانے کو بے بنیاد قرار دیا اور مطالبہ کیا ہے ہم نے یہ منصوبہ اس لئے منظور اور مکمل کرایا ہے کہ ہم صاف پانی کا استعمال کریں اور کود کو اپنے بال بچوں گدلے پانی کے استعمال سے پیدا ہونے والی مہلک بیماریوں سے محفوظ رکھیں ۔ اگر گدلا پانی ہی استعمال کرانا تھا تو ہمارا پرانا منصوبہ اور ٹینکی سے ہی پانی استعمال کرتے یا ہم اپنے پاس سے ہی نالے سے پانی لاکر اپنی روایات کے مطابق کنواں بنا کر اس میں سٹور کر کے استعمال کرتے۔ عوامی حلقوں نے ڈپٹی کمشنر نگر نوید احمد سے مطالبہ کیا ہے وہ اس تشویشناک صورتحال کا نوٹس لیتے ہوئے واٹر سپلائی پر مامور تمام ملازمین کو فوری طورفایا چشمے کے صاف پانی فراہمی کے لئے ضروری اقدامات کرا کر ہمیں اور ہمارے بال بچوں میں گدلے اور خراب پانی کے استعمال سے پیدا ہونے والی ،پیٹ،گلے گردوں میں پتھری جیسی مہلک بیماریوں سے محفوظ رکھیں ۔

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

About TNN-GB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*