تازہ ترین

گلگت بلتستان کا چپہ چپہ عوامی کا ملکیت ہے، لینڈ ریفارمز کے نام سے اس حقیقت کو چھپانے کی کوشش نہ کی جائے ۔ عوامی ایکشن کمیٹی

گلگت(چیف رپورٹر) عوامی ایکشن کمیٹی گلگت بلتستان کا ایک اہم اجلاس چیر مین مولانا سلطان رئیس کے سربراہی میں منعقد ہوا اجلاس میں لینڈ ریفارمز سمیت لوڈ شیڈنگ اور سمارٹ میٹر کے حوالے سے تفصیلی گفتگو کی گئی۔اجلاس میں متفقہ طور پر یہ فیصلہ کیا گیا کہ گلگت بلتستان کا چپہ چپہ جی بی کے عوام کا ملکیتی ہے لینڈ ریفارمز کے نام سے اس حقیقت کو چھپانے کی کوشش نہ کی جائے اور حقائق کو مسخ کرنے کی بھرپور الفاظ میں مذمت کرتے ہیں ہم ملک عزیز پاکستان کے ترقی کے لئے ہر کردار ادا کرنے کے لئے بھرپور تیار ہے مگر ہم پر اتنا بوجھ نہ ڈالا جائے جو ہم سہہ ہی نہ سکے۔اگر کسی بھی ادارے کو زمین کی ضرورت ہے تو وہ اس علاقے کے عوام کو اعتماد میں لے کر معاوضہ ادا کرکے لے جائے مگر اس زمین پر زبردستی قبضہ کسی صورت قابل قبول نہیں ہوگا۔اجلاس میں حکومت سے مطالبہ کیا گیا کہ گلگت بلتستان سے لوڈ شیڈنگ کے خاتمے ندی نالوں پر خزانے کو برباد کرنے کے بجائے دریاوں پر منصوبے لگائے جائے تاکہ یہ منصوبے بروقت مکمل بھی ہو سکے اور دیرپا چل بھی سکے۔لہذا فوری طور پر حکومت ہنزل سکارکوئی اور چھلمش داس منصوبے پر کام شروع کرے تاکہ گلگت سے بجلی کا بحران مکمل طور پر خاتمہ ہو سکے۔اسی طرح تمام اضلاع میں بھی ایسے منصوبے شروع کئے جائے۔اجلاس میں گلگت شہر میں سمارٹ میٹر کے نام پر ہونے والی کرپشن کے منصوبے کو رد کردیا گیا اور اعلی اداروں سے مطالبہ کیا گیا کہ اس منصوبے کو فوری طور پر روکا جائے اور اپنے من پسند ٹھیکیداروں کو ٹھیکہ دینے کے لئے ایسے منصوبے کسی صورت منظور نہیں ہے یہ صرف قومی پیسے کے ضیاع کے علاوہ کچھ بھی نہیں ہے۔اجلاس میں عوامی ایکشن کمیٹی کے ایگزیکٹیو باڈی کے ممبران سمیت انجمن تاجران کے رہنماوں نے بھی شرکت کیا۔

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

About TNN-GB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*