تازہ ترین

بلتستان ریجن کے پرائیوٹ سکول مالکان نے اپنی حکومت قائم کرلی، ریاست کو چیلنج۔

سکردو( پ،ر) بلتستان پرائیوٹ سکول مالکان نے حکومتی احکامات ہوا میں اڑا دیئے وزیر اعظم کی جانب سے بجٹ کے دوران مقرر کردہ تنخواہ بھی دینے سے انکار ی ہیں پرائیوٹ سکولز مالکان سے کوئی پوچھنے والا نہیں ہے جبکہ فیسوں میں اپنی مرضی سے اضافہ کرتے ہیں محکمہ تعلیم بھی ان سکول مالکان کے سامنے بے بس نظر آتے ہیں۔حکومت کی جانب سے پرائیوٹ سکولریگولرٹی اتھارٹی بنانے کا فیصلہ بھی کھٹائی میں پڑ گیا ہے۔ گزشتہ جون میں بجٹ کے دوران وزیر اعظم نے اعلان کیا تھا کہ مزدور کم از کم اجرت 14ہزار روپے ہوگی لیکن ان پڑھیلکھے اساتذہ کو مزدور کی اجرت بھی میسر نہیں ہے پرائیوٹ سکول مالکان ااس حد تک طاقت ور ہوگئے ہیں کہ اگر کوئی بچہ فیس نہ دے سکے تواس صورت میں سرٹیفکیٹ بھی حاصل نہیں کر سکتا ہے جبکہ دوسرا پرائیوٹ ادارہ تنظیم سے پوچھے بغیر داخلہ بھی نہیں دیتا ہے۔ ضرورت اس امر کی ہے کہ حکومت فوری طور پر ان معاملات کا نوٹس لے کر ریگولرٹی اتھارٹی بنائے اور تنخواہوں سمیت فیسوں کے حوالے سے اقدامات اٹھائے ۔

About TNN-GB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*