تازہ ترین

اسلام اور عورت کے حقوق۔

اور عورتوں کے بھی ویسے حق ہیں جسے ان پر مردوںکے ہیں اچھائی کے ساتھ۔ (سورہ بقرہ آیت نمبر ۸۲۲)۔
اسلام کو دنیا کا واحد ترین اور مکمل ترین مذہب کہا جاتا ہے، جس میں ہر مسئلے کا آسان حل کے لئے ہدایت موجودہے۔آج خواتین کی عالمی دن کے مناسبت سے اسلام میں خواتین کی اہمیت اور مسلم ممالک میں ان کو درپیش مسائل پرگفتگو کرنا لازمی سمجھتا ہوں۔تاریخ گواہ ہے کہ جب پیغمبر اسلامﷺ پر پہلی وحی نازل ہوئی تو رسول خدا ﷺڈر گئے، تب آپﷺ کی دل جوئی کرنے والی شخصیت کوئی اور نہیں بلکہ ایک خاتون تھی۔گویا حضرت خدیجہ ؓ نے دین اسلام کی بنیاد رکھنے میں حضورپاک ﷺکی حوصلہ افزائی کی اور اپنی آخری سانس تک اسلام کی خدمت کرتی رہی ۔ ان کے بعد حضرت فاطمہ ؓ نے اسلام اور حضور پاکﷺکی آل کی خدمت کی صورت میں اس سلسلے کو جاری رکھا۔رابعہ بسرا اور راضیہ سلطانہ عالم اسلا م کے ایسے نام ہیں جنہوں نے اسلام کی سربلندی کے لئے قابل ذکر خدمات سرانجام دئیے۔پاکستان میں بھی ایسی باہمت خواتین کی کوئی کمی نہیں ، جو اسلام اور ملک کا نام بین الاقوامی سطح پر روشن کررہی ہیں۔جن میں عاصمہ جہانگیرکا نام قابل ذکر ہے۔اب سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ کیا ہم مسلمانوں! نے ان خواتین کو وہی مقام دینے کی کوشش کی جو اسلام اور حضورﷺکے اصل تعلیمات کے عین مطابق ہیں یا ہم صرف عورت کی پردہ پر زور دیتے رہیں ہے۔جبکہ قرآن پاک کے مطابق پردہ مرد پر بھی پردہ (نظرکی پردہ)اتنا ہی لازمی جتنا عورت پر۔مسلم ممالک میں جس قدر خواتین کے لئے مسائل درپیش ہے شاہد کسی اورخطے میں اس قدر ہو۔کچھ دن پہلے معصوم زینب اور عاصمہ قوم کی بییٹوں کو داغدار کرکے قتل کیا گیا،جس سے میرے ملک پاک کی دنیا بھر میں بد نامی ہوئی۔ جو ہم سب کے لئے سوالیہ نشان ہے۔ افسوس کہ ہم نے حضور پاکﷺکے تعلیمات کو اس قدر فراموش کردیا ہے کہ ہم خواتین کو گھر میں پڑی ہوئی اُس عام برتن کے طور پر سمجھتے ہیں ، جسے ہم جس طرح چاہے استعمال کرسکتے ہیں۔ اگر ہم نے وطن عزیزکی وقار کو پامال کرنے سے بچانا ہے تو ہمیں خود ایک ایسا نظام اور ماحول پیدا کرنے کی کوشش کرنی ہوگی جہاں خواتین اپنی آزادی کو ملک و قوم کی ترقی کا حصّہ بناسکیں۔اگر ہم ایسے نظام لانے میں کامیاب ہوجاتے ہیں تو ہم ہر گھر سے رابعہ بسرا اور راضیہ سلطانہ جیسی باہمت خواتین کی امُید کرسکتے ہیں اوراس کے ساتھ ساتھ میری مائوں اور بہنوں سے مودبانہ التجا ہے کہ آپ تعلیم و علم میں مزید محنت اور لگن سے کام لے کیونکہ آپ میں سے ہر ایک نے ایک خاندان کی تربیت کرنی ہے۔ اس خطے کے بہت سے خواتین نہ صرف پاکستان بلکہ دنیا کے مختلف ممالک میں تعلیم اور ذریعے معاش سے وابسطہ ہیں۔ ان سب کے لئے آج کے دن کے مناسبت سے میرا پیغام یہ ہے کہ آپ گلگت بلتستان کا چہرا،غروراور فخر ہیں۔اس فخر اور غرور کی حفاطت اوراپنی ہرمت اور عزت کی حفاطت آپ کی اولین ذمہ داری ہے۔ تاکہ دنیا آپ کی کردار اور تربیت کی مثال دے۔ آخر میں اللہ پاک سے دُعا ہے کہ ہمیں حضورﷺ کے تعلیمات پر اُس کے اصلی روح سے عمل کرتے ہوئے خواتین کو ان کے حقوق دینے کی توفیق عطا فرما ئیں۔ امین

تحریر: وجاہت عالم

About ISB-TNN

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*