تازہ ترین

وزیر تعلیم گلگت بلتستان کے ضلع میں نظام تعلیم کا بدترین صورت حال، لیکن کوئی پُرسان حال نہیں۔

گانچھے( پ،ر)کورو گانچھے کے ساتھ محکہ تعلیم کا سوتیلی ماں جیسا سلوک ، وزیر اعلی سے لیکر ڈی ڈی ایجوکیشن کوئی سُننے والا نہیں۔ وزیر تعلیم نے کورو اسکول سے جان بوجھ کر ہاتھ اُٹھایا ہوا ہے جس کی اصل وجہ مسلکی اور سیاسی اختلاف بتایا جاتا ہے۔ تفصیلات کے مطابق گرلز اسکول کورو گانچھے صرف 4 کمروں پر مشتمل ہیں جبکہ اس اسکول میں میٹرک تک کی تعلیم دی جاتی ہے۔ اس اسکول میں پانچویں کلاس کی 60 طالبات ہیں جنہیں مجبوری میں کو ایجوکیشن پر مجبور کیا ہوا ہے ۔اسکول اتنظامیہ کے مطابق ضلع گانچھے میں سب سے پہلے کتابیں پونچنے کے باجود طلبہ طالبات ابھی تک کتابوں سے محروم ہیں۔ والدین نے وزیر اعلی گلگت بلتستان اور چیف سیکرٹیری سے مطالبہ کیا ہے کہ اس اسکول کیلئے ضرورت کے مطابق اساتذہ فراہم کریں اور ضرورت کے مطابق اسکول کی عمارت کو بڑا کرکے ہر کلاس کیلئے الگ الگ کمرے بنائیں کیونکہ اس وقت کلاس روم نہ ہونے کی وجہ سے ایک کلاس روم میں تین تین کلاسوں کو پڑھانے پر مجبور ہیں۔
عمائدین کورو کا اس موقع پر میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہنا تھا کہ محکمہ ایجوکیشن اوروزیرتعلیم ابراہیم ثنائی کا کورو کے عوام کے ساتھ ناروا سلوک اور ہمارے ساتھ دشمنی اور ظلم و بر بریت کا یہ سلسلہ اب بند کیا اور ہماری شرافت کو بے وقوفی اور ناہلی سمجھ کے غلط فائدہ اٹھانے سے اب باز آئیں اور مزید عوام کے جذبات سے نہ کھیلا جائے۔

  •  
  • 8
  •  
  •  
  •  
  •  
    8
    Shares

About TNN-ISB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*