تازہ ترین

گلگت بلتستان کا پسماندہ ترین ضلع دیامر کے حوالے سے اہم انکشاف، سیاسی قیادت پر سوالیہ نشان۔

چلاس(ڈسٹرک بیورو خصوصی رپورٹ ) ڈسٹرکٹ دیامر کی آبادی2017کے مطابق دو لاکھ 35ہزار پر مشتمل ہے ،نوجوانوں کی تعداد شرح بیروزگاری 80فصید ہے۔دیامر میں کل 254 اسکولزہے،کوئی یونیورسٹی نہیں،ایک بوائز ڈگری کالج ہے۔ گورنمنٹ اسکولز کی کل تعداد 179 ہے۔ جس میں 21908طلبہ و طالبات زیر تعلیم ہیںپرائیویٹ اسکولز 203 ہے جس میں 12227 طلبہ طالبات زیر تعلیم ہے۔ انگلش میڈیم ایک نیم سرکاری پبلک اسکول کالج موجود ہے۔. سب ڈویژن چلاس میں 63فیصدلڑکیاں اور 35 فصد لڑکے بنیادی تعلیم سے محروم ہیں۔ تحصیل داریل میں 95فیصد گرلز اور 78فیصد بوائز تعلیم سے محروم ہے جبکہ تحصیل تانگیر میں 98فصد گرلز اور 88فصد تعلیم سے محروم ہیں۔ شہر چلاس میں 50 بیٹ کی ایک ڈی ایچ کیو ہسپتال موجود ہے کل120 ڈاکٹرز تعنیات ہیں جس میں حاضر ڈیوٹی صرف 25 ڈاکٹرز موجود ہے۔30بیڈ ٹی ایچ کیوہسپتال تانگیر میں ایک ہسپتال ہے جس میں کل د و ڈاکٹرہے جبکہ داریل میں دس بیٹ کی ایک ہسپتال ہے جس میں ایک ڈاکٹر موجود ہے،(پرائیویٹ کوئی ہسپتال موجود نہیں ہے )فلاحی ادارے کوئی نہیں ہے۔

About ISB-TNN

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*