تازہ ترین

ایران کا راستہ روکنے دو طاقتور ترین ممالک نے مشترکہ جدوجہد کا عہد کرلیا۔

اسلام آباد( خبررساں ایجنسی) اسرائیلی وزیر اعظم بینجمن نیتن یاہو نے وائٹ ہاؤس میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ سے کہا ہے کہ ایران کو روکنا ہمارے لیے ایک مشترکہ چیلنج ہے۔ امریکی نشریاتی ادارے کے مطابق اوول آفس میں دونوں سربراہان نے مشرق وسطیٰ میں ایران کے بڑھتے ہوئے اثر اور جوہری ہتھیاروں کو تشکیل دینے کے ایران کے عزائم کو روکنے کے لیے 2015 میں ایران کے ساتھ ہونے والے بین الاقوامی معاہدے کے حوالے سے گفتگو کی۔ دونوں نے سمجھوتے کو ناکافی قرار دیا۔ نیتن یاہو نے کہا کہ ایران نے اپنے جوہری عزائم ختم نہیں کیے۔ جوہری معاہدے میں ایران کی ہمت بڑھی۔ اب وہ ہر جگہ جارحیت کرتا پھر رہا ہے، جس میں ہماری سرحدیں بھی شامل ہیں۔ ٹرمپ نے ایران کا نام لیے بغیر کہا کہ امریکا اور اسرائیل فوجی اعتبار سے اور دہشتگردی کے انسداد کے حوالے سے انتہائی قریب ہیں اور سارے معاملات میں جن میں ہم ساتھ مل کر کام کرتے ہیں۔ تعلقات کبھی اس سے بہتر نہیں رہے۔ اسرائیلی ریاست کے 70 ویں یوم آزادی کے موقعے پر امریکی سفارت خانے کے افتتاح کے لئے ممکن ہے کہ وہ مقبوضہ بیت المقدس جائیں ۔ میں آنا چاہوں گا، اگر یہ ممکن ہوا تو میں ضرور آؤں گا۔ فلسطینی بات چیت کی میز پر آنے کے خواہاں ہیں۔ تاہم اگر وہ ایسا نہیں کرتے، تو امن نہیں آ سکتا۔

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

About TNN-GB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*