تازہ ترین

دیامر قراقرم انٹرنیشنل یونیورسٹی کیمپس ایڈمیشن آگاہی مہم کے حوالے سے چلاس ہائی سکول میں سمینارکا انعقاد۔

چلاس:(شفیع اللہ قریشی)دیامر قراقرم انٹرنیشنل یونیورسٹی کیمپس ایڈمیشن آگاہی مہم کے حوالے سے چلاس ہائی سکول میں سمینارکا انعقاد کیا گیا,شعور آگاہی سمینار میں ڈاکٹر محمد شاہ نواز فوکل پرسن دیامر کیمپس کی سربراہی میں پروفیسرزڈگری کالج چلاس احسان اللہ،فضل الرحمان،ﮈی آئی ایس رحیم اللہ,اساتذہ ،سیاسی،سماجی،اور طلبہ نے کثیر تعداد میں شرکت کی۔سمینار سے خطاب کرتے ہوئے فوکل پرسن قراقرم انٹرنیشنل دیامر کیمپس نے کہا کہ پورے پاکستان میں پچھلے سال اکیس کیمپسزکی منظوری دی گئی جس میں تین کیمپسزگلگت بلتستان دیا گیا،تین میں سے ایک دیامر کیمپس شامل ہیں۔انھوں نے کہا کہ دیامر کے لوگ خوش قسمت ہیں۔دیامر کے تمام طلبہ اس سے مستفید ہونگے۔انھوں نے کہا کہ دیامر کیمپس میں چاراہم پروگرامز،بی ایس سی سوشالوجی،بی ایس سی ایجوکیشن،بی ایس سی آرکیالوجی اور انفارمیشن ٹیکنالوجی، کا آغاز کردیا گیا ہے اور اس کےساتھ انگلش لینگویج ڈپلومہ اور سرٹیفکیٹ سے فائدہ حاصل کر سکیں گے۔انھوں نے کہا کہ اب میٹرک ،ایف اے اور بی اے کے تمام امتحانی پیپرز دیامر کیمپس میں چیک ہونگے ۔چار فروری سے بڑھا کر بیس فروری تک داخلہ ایکسٹینشن کیا گیا تھا تاکہ زیادہ سے زیادہ طلبہ اس میں داخلہ لے سکے۔ کے آئی یو دیامر کیمپس کے ایڈمیشن اور پروگرام کی اہمیت اور افادیت پر روشنی ڈالتے ہوئے انھوں نے کہا کہ دیامر میں قدرتی معادنیات ،جنگلات سے مالامال ہیں، بی ایس سی سوشالوجی ایم اے ،ایم اےس سی کے برابر ہے اور اس سے سی پیک اور دیامر بھاشاہ ڈیم کی موبلائزیشن میں اہم کردار ادا کریگا۔بی ایس سی آرکیا لوجی کا بہت اہم کردار سے جس سے دیامر کے آثارکو محفوٰظ کیا جا سکتا ہے،دیامر کا علاقہ قدرتی وسائل سے مالامال ہیں،بی ایس سی ایجوکیشن سے دیامر میں تعلیمی معیار کی بہتری ہو گی۔جس میں ایف اے اور گریجویٹ کے طلبہ داخلہ لے سکتے ہیں۔انگلیش کورس میں میٹرک کے طلبہ مستفید ہونگے, آنے والے جدید دور میں انگریزی زبان سے اپنی ہچکیچاہٹ دور کرینگے اور بنا جیجک کے انگلیش بول سکیںگے۔ہم نے دیامر کیمپس کے لئے اہم پروگرام لائے ہیں اس کی کامیابی کے لئے دخلہ لینا ہے۔آئندہ سمیسٹر میں بی ایس سی فارسٹی اور بی ایس سی ایکریکلچر بھی لا رہے ہیں ۔اس سے نہ صرف دیامر کےطلبہ کو فائدہ ہے بلکہ ملازمین کو بھی فائدے حاصل ہے اعلی تعلیم کے حصول کے لئےداخلہ لے سکتے ہیں ملازمین کے لئے خصوصی پارٹ ٹائم کلاسس ہونگی, انھوں نے کہاکہ یہی دیامر کیمپس مستقبل میں بلتستان یونیورسٹی کی طرح یونیورسٹی بنے گا۔اس موقع پر تقریب سے خطاب کرتے ہوئے پروفیسر احسان اللہ نے کہا کہ علم نام ہے اس کا اگاہی ہے۔دیامر میں پسماندگی کی وجہ سے کچھ بچے تعلیمی وسائل سے محروم ہے۔انھوں نے کہا کہ اس علاقے کی خوش قسمتی ہے کہ جو یہاں کیمپس بنا ہے۔اس کو کو ہم خوش آئند قرار دیتے ہیں, کہا کہ کسی ترقی یافتہ ممالک کی طرف دیکھا جائیں تو اس کی وجہ وہ اعلیٰ تعلیم سے وابستہ ہیں جو بچوں کو جدید فطری ماحول میں تعلیم دی جاتی ہے۔انھوں نے کہا کہ اس علاقے کی جغرافیائی تعلیمی شعبہ سے بہت پیچھے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ یہ روشنی گھر گھر سے روشن ہونا چاہئے۔داریل تانگیر سمیت پورا ڈسٹرکٹ آرکیالوجی کی بدولت میوزیم بن سکتا ہے۔تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ڈی آئی ایس رحیم اللہ نے کہا کہ ہماری روایات اور زہانت کے اعتبار سے دیکھا جائے تو وہ دیامر ہی ہیں۔انھوں نے کہا کہ دیامر کیمپس کا وجود میں آنا خوش قسمتی سمجھتا ہوں۔اس موقع پر پروفیسر فضل الرحمٰن نے ایڈمیشن سمینار کے حوالے سے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ کے آئی یو دیامر کیمپس داخلہ کے حوالے سے ضلع دیامر کے تمام تحصیلوں میں عنقریب ایڈمیشن آگاہی کے لئے سمیناروں کا انعقاد کیا جائے گا۔اور اسپیشلی طور پر طلبہ و عمائیندین دیامر کے ہمراہ واک کا بھی اہتمام کیا جائے گا۔

  •  
  • 4
  •  
  •  
  •  
  •  
    4
    Shares

About TNN-GB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*