تازہ ترین

سکردو میں سنئیر ایڈوکیٹ صدر سپریم اپلیٹ بار کورٹ احسان علی کی گرفتاری کے خلاف زبردست احتجاجی مظاہرہ۔

سکردو(نامہ نگار) گلگت بلتستان کے ممتاز سیاسی رہنا اور قانون دان صدر سپریم اپلیٹ بار کورٹ احسان علی ایڈوکیٹ کو جھوٹے اور من گھرٹ ایف آئی آر کا بہانہ بنا کر پابند سلاسل کے خلاف ضلع سکردو میں بلتستان اسٹوڈنٹس فیڈریشن، بی وائی ایف۔آئی ایس او بلتستان۔بلتستان یوتھ ایلائنیس، جی بی یوتھ الائینس کی جانب سے حسینی چوک سکردو سے یادگار شہدا تک ریلی نکالی اور احتجاج کیا۔اس موقع پر مقررین نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ حکومت کو اوچھے ہتھگنڈوں سے نکل کر حقیقی معنوں میں فیصلے کرنا چاہیے۔ہم پاکستان کے آئینی شہری نہیں ہیں ۔ گلگت بلتستان میں ظلم ،جبر اقوام متحدہ کے قانون کی خلاف ورزی ہے ۔گرفتاریاں ،شیڈول 4 مسلے کا حل نہیں ۔آئے روز گرفتاریوں ظلم،جبر سے گلگت بلتستان بھی بلوچستان جیسی صورت حال اختیارکرے گا۔پاکستان کو اپنے دائرے میں رہ کر کام کرنا چاہیے ۔ مقررین کا کہنا تھا احسان ایڈوکیٹ کو توہین مذہب کے تحت گرفتاری دراصل ایک بہانہ ہے حکومت دراصل گلگت بلتستان کے محکوم اور مظلوم قوم کیلئے آواز اُٹھانے والوں کو سبق سکھانا چاہتے ہیں۔ مقررین کا کہنا تھا کہ احسان علی ایڈوکیٹ واحد شخص ہے جو سپریم کورٹ سے لیکر گلگت بلتستان کے عدالتوں سمیت ریاستی جبر کے تحت قید میں موجود حقوق کیلئے آواز اُٹھانے والوں انصاف دلانے میں سب سے ذیادہ متحرک ہیں۔ مقررین کا کہنا تھا کہ حکومت گلگت بلتستان کو بین الاقوامی قوانین کے مطابق حقوق نہیں دلاسکتے تو کم از کم متنازعہ خطے کو عوام کو جینے کا حق دیں۔

About TNN-GB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*