تازہ ترین

معروف قانون دان،انسانی حقوق کی علمبردار عاصمہ جہانگیر انتقال کر گئی۔

لاہور(ویب ڈیسک ) سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن کی سابق صدر اور معروف قانون دان عاصمہ جہانگیر 66 برس کی عمر میں انتقال کر گئیں،اچانک طبیعت خراج ہونے پر عاصمہ جہانگیر کو حمید لطیف ہسپتال منتقل کیا گیا تاہم وہ جانبر نہ ہو سکیں، عاصمہ جہانگیر کا انتقال دل کا دورہ پڑنے سے ہوا ، عاصمہ جہانگیر 27 جنوری 1952ء کو پیدا ہوئیں،عاصمہ جہانگیر نے 1978 میں پنجاب یونیورسٹی سے ایل ایل بی کی ڈگری حاصل کی تھی عاصمہ جہانگیر کو 2010ء میں حکومت پاکستان کی جانب سے ہلال امتیاز سے نوازا گیاتھا۔صدر مملکت ممنون حسین نے معروف قانون دان عاصمہ جہانگیر کے انتقال پر اظہار تعزیت کرتے ہوئے کہا کہ عاصمہ جہانگیر نے قانون کی بالا دستی اور جمہوریت کے استحکام کے لیے ناقابل فراموش کردار ادا کیا۔صدر مملکت نے عاصمہ جہانگیر کی مغفرت اور بلندی درجات کے لیے بھی دعا کی ہے جبکہ چیف جسٹس آف پاکستان میاں ثاقب نثار نے بھی عاصمہ جہانگیر کے انتقال پر افسوس کا اطہار کیا ہے جبکہ چیف جسٹس نے عاصمہ جہانگیر کی خدمات کو خراج تحسین پیش کیا ہے جبکہ سابق صدر آصف علی زرداری نے بھی عاصمہ جہانگیر کے انتقال پر اظہار تعزیت کیا ہے۔آصف علی زرداری نے عاصمہ جہانگیر کے اہلخانہ سے بھی اظہار تعزیت کیا ہے آصف علی زرداری کا کہنا تھا کہ عاصمہ جہانگیر کا انتقال بہت بڑا دھچکا ہے ان کا کہنا تھا کہ عاصمہ جہانگیر نے جمہوریت اور انسانی حقوق کے لیے بہادری سے جدوجہد کی۔ان کا کہنا تھا کہ عاصمہ جہانگیر ایک فرد نہیں انسانی حقوق کے لیے آواز تھیں۔سابق وزیر اعظم میاں محمد نواز شرریف ،وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی، وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف، مریم نواز،وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ، گورنر پنجاب محمد رفیق رجوانہ، گورنر سندھ محمد زبیر عمر،وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا پرویز خان خٹک، گورنر کے پی انجینئر اقبال ظفر جھگڑا ،وزیراعلیٰ بلوچستان میر عبد القدوس بزنجو، گورنر بلوچستان محمد خان اچکزئی ،اعتراز احسن ،حامد خان، بابر اعوان، علی احمد کرد، جسٹس (ر) طارق محمود، جسٹس (ر) ناصرہ جاوید اقبال، سلمان اکرم راجہ، بیرسٹر علی ظفر اور دیگر رہنمائوں نے عاصمہ جہانگیر کے انتقال پر دکھ اور افسوس کا اظہار کیا ہے تمام رہنمائوں نے عاصمہ جہانگیر کے اہلخانہ سے اظہار تعزیت کیا ہے۔

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

About TNN-GB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*