تازہ ترین

سب کچھ لُٹا کر بھی نوکری نہ مل سکے۔عدالت جانے کا فیصلہ

شگر(نامہ نگار)پا تھماچو تسر کے علی محمد کوپانچ سال سے محکمہ تعمیرات شگر کے درپر ٹھوکر کھانے منت سماجت کے باؤجود نہ نوکری نہ مل سکا۔ نوکری کی خاطر سب کچھ لٹا چکا ہوں محکمہ تعمیرات کے حکام کی جانب سے ٹال مٹول سے کام لیتے ہوئے دھوکہ دیا ۔ وزیر اعلی گلگت بلتستان مجھ پر رحم کریں اور نوکری فراہم کریں۔میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے تھماچو تسر سے تعلق رکھنے والے شخص علی محمد نے بتایا کہ 2012میں نوکری دینے کی وعدے پر محکمہ تعمیرات عامہ شگر کی جانب سے واٹر سپلائی کیلئے پانی کی ٹینکی کو میری اراضی پر تعمیر کیا گیا تھا۔ جس کا معاوضہ مجھے نہیں دیا گیا جبکہ وعدہ کیا تھا کہ معاوضہ کے بجائے محکمہ تعمیرات و واٹر سپلائی میں مناسب ملازمت دی جائے گی۔لیکن پانچ سال گزرنے کے باؤجود تاحال نوکری نہ مل سکا۔محکمہ تعمیرات عامہ کے حکام کت در پر ٹھوکریں کھانے اور منت سماجت کرنے پر حکام ٹال مٹول سے لیکر مسلسل مجھے دھوکہ دے رہے ہیں۔ اگر محکمہ نوکری نہیں دے سکتا تو مجھے صاف لفظوں میں بتائے لیکن حکام دھوکہ دہی کے ذریعے میرے جذبات سے کھیلنے کیساتھ مجھے ذہنی طور اذیت پہنچا رہے ہیں۔انہوں نے وزیر اعلی گلگت بلتستان ،صوبائی وزیر تعمیرات اور سیکریٹری ورکس سے اپیل کی ہے کہ ان پر رحم کھاتے ہوئے انہیں ان کا جائز حق دیا جائے۔اور انہیں معاوضے کی جگہ محکمے میں ملازمت دی جائے۔ورنہ وہ محکمے کے حکام کے خلاف عدالت عالیہ کا در کھٹکھٹانے پر مجبور ہونگے۔

About TNN-GB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*