تازہ ترین

فاٹا ریفارمز بل پیش کرنے پر مولانا سخت ناراض، حکومت کی دوڑئیں لگ گئی۔

اسلام آباد (آئی این پی )حکومت کی جانب سے اسمبلی میں فاٹا ریفارمز بل پیش کرنے پر جمعیت علمائے اسلام ( ف) کی حکومت سے الگ ہونے کی دھمکی وفاقی وزیر سرحدی امور لیفٹیننٹ جنرل ( ر) عبدالقادر بلوچ مولانا فضل الرحمن کو منانے ان کی رہائش گاہ پہنچ گئے اور کہاکہ فاٹا ریفارمز پر مولانا سے کوئی اختلاف نہیں ، فاٹا میں 2018کو صوبائی سیٹوں پر الیکشن نہیں ہوں گے جبکہ مولانا فضل الرحمان نے کہاکہ وزیر اعظم اور وفاقی وزیر نے یقین دہانی کرائی ہے کہ فاٹا کا معاملہ کو روک دیا ہے ۔ تفصیلا ت کے مطابق حکومت کی جانب سے قومی اسمبلی میں فاٹا ریفارمز بل کو قومی اسمبلی میں پیش کرنے پرجمعیت علمائے اسلام ف نے حکومت سے الگ ہونے کی دھمکی دے دی ۔ میڈیا سے مختصر گفتگو میں مولانا فضل الرحمن کا کہناتھا کہ حکومت طے شدہ معاملات سے انحراف اور ہمارے ساتھ دھوکہ کر رہی ہے ۔ جس کے بعد حکومت میں رہنے کا کوئی جواز نہیں ۔انہوں نے کہاکہ فاٹا بل منظور نہیں یعنی انضمام کا بل منظور نہیں ہوا رواج ایکٹ بھی نہیں ہوگا انضمام بھی نہیں ہوگا تسلیم کرلیا گیا کہ صوبائی اسمبلی میں سیٹیں بھی نہیں ہوں گی بل میں صرف عدالتوں کو فاٹا تک رسائی دی گئی ہے اس بل میں صرف سپریم کورٹ اور پشاور ہائی کورٹ کو فاٹا تک توسیع دی گئی ہے حکومت نے اعلی عدلیہ کی فاٹا پر توسیع کے معاملے پر اعتماد میں نہیں لیا ۔ دوران اجلاس وفاقی وزیر عبدالقادر بلوچ مولانا رہائش گاہ پہنچ گے ۔ بعد مین میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے عبدالقادر بلوچ نے کہاکہ فاٹا ریفارمز کے 25 نکات میں سے ایک نکتہ قومی اسمبلی سے پاس کرایا گیاہائی کورٹ اور سپریم کورٹ کی عمل داری کو فاٹا تک بڑھایا گیا ہے فاٹا کے انضمام کا فیصلہ آئین آرٹیکل 247 کے مطابق کیا جائے گاآرٹیکل کے مطابق صدر کو ایک درخواست دینا پڑے گی ہمارے اتحادی جے یو آئی کا اس نقطہ پر اختلاف تھامولانا فضل الرحمان سے کئی ملاقاتیں ہوئیں اور اس امر پر اتفاق کیا کہ فاٹا کے انضمام کے فیصلہ وقتی طور پر نہیں چھیڑا جائے گاجب سیاسی جماعتیں متفقہ مطالبہ کریں گی تو صدر کو درخواست کی جائے گی انہوں نے کہاکہ مولانا صاحب کو اپنی صفائی پیش کرنے کی ضرورت محسوس کی حکومت فاٹا کو 5 سال سے پہلے قومی دھارے میں لائے گی فاٹا ریفارمز پر مولانا کا کوئی اختلاف نہیں دو نکات پر مزید کارروائی روک دی گئی ہے اس سال صوبائی سیٹوں پر الیکشن اور رواج ایکٹ کو روکا گیا ہے، مولانا فضل الرحمن کا کہناتھا کہ وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی اور وزیر سرحدی امور عبدالقادر بلوچ نے فاٹا کے معاملے پر ملاقات کی وزیر اعظم نے یقین دلایا ہے کہ فاٹا اور رواج ایکٹ پر کاروائی روک دی ہے ہم نے وفاقی وزیر سے اپنے تحفظات کا اظہار کر دیاہے۔

About TNN-GB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*