تازہ ترین

امجد ایڈوکیٹ سیاست کی آڑ میں علاقائی تعصب نہ پھیلائے۔ پانچ سال کے اقتدار کا نتیجہ عوام کے سامنے لائیں۔

گلگت(پ۔ر) صوبائی مشیر اطلاعات گلگت بلتستان شمس میر نے کہا ہے کہ امجد ایڈوکیٹ سیاست کی آڑ میں علاقائی تعصب نہ پھیلائے۔پیپلز پارٹی پاکستان میں 3 اور گلگت بلتستان میں گزشتہ پانچ سال اقتدار میں رہی ہے اور امجد ایڈوکیٹ جی بی کونسل میں پانچ سال اقتدار کے مزے لوٹتے رہے لہٰذا امجد ایڈوکیٹ پہلے گلگت بلتستان کے عوام کو یہ بتائے کہ پیپلزپارٹی کی وفاقی اور صوبائی حکومت کے دور میں وہ گلگت بلتستان کو آئینی صوبہ کیوں نہ بناسکے یہ بات کسی سے پوشیدہ نہیں زوالفقار علی بھٹو سے لیکر محترمہ بینظیر بھٹو تک اس علاقے کو آئینی نظام کے معاملے میں کوئی پیشرفت نہیں ہوئی آصف زرداری اس ملک کے پانچ سال صدر مملکت رہے تو انہوں نے کرپشن اور لوٹ مار کے علاوہ کونسا تیر مارا تھا یوسف رضا گیلانی اور راجہ پرویز اشرف وزرائے اعظم رہے لیکن ان کی توجہ بھی لوٹ کھسوٹ پر رہی دوسری جانب پیپلز پارٹی کے چوہدری اعتزاز احسن اور موجودہ چیئرمین سینیٹ رضا ربانی نے گلگت بلتستان کے آئینی صوبے کے خلاف ببانگ دہل قومی اسمبلی اور سینیٹ میں مہم چلائی،مشیر اطلاعات نے کہا کہ جب میاں محمد نواز شریف گلگت بلتستان کی آئینی اصلاحات کے لئے کمیٹی بنائی تو پیپلز پارٹی کے سابق وزیراعظم آزاد کشمیر چوہدری عبدالمجید نے سب سے پہلے آئینی کمیٹی کی مخالفت کی، پیپلز پارٹی ایک دوغلی جماعت ہے جو وفاق میں کچھ اور کہتی ہے اور گلگت بلتستان میں کچھ اور راگ الاپتی ہے تاریخ گواہ ہے کہ آئینی صوبے کی پیشرفت میں بھی سب سے بڑی رکاوٹ وفاق میں پیپلزپارٹی رہی ہے.مشیر اطلاعات شمس میر نے مزید کہا کہ پاکستان کی تاریخ میں وہ مرد حر نواز شریف ہی تھا جس نے پیپلزپارٹی کی وفاقی پالیسیوں اور پیپلزپارٹی آزاد کشمیر کی مخالفت کی پرواہ کئے بغیر گلگت بلتستان کے لئے آئینی اصلاحاتی کمیٹی تشکیل دی اس کمیٹی نے جوسفارشات دی ہے ان میں گلگت بلتستان کے عوام کو زیادہ سے زیادہ سیاسی،سماجی اور معاشی اختیارات تفویض کرنا ہے جس کے تحت گلگت بلتستان کی اسمبلی کو بااختیار بنانا اور اہم قومی آئینی اداروں میں نمائندگی فراہم کرنا ہے ان آئینی اصلاحات میں ملک کے تمام بڑے اداروں میں گلگت بلتستان کے نمائندہ فورم سے باقاعدہ مشاورت کی گئی ہیں انہوں نے کہا کہ پاکستان مسلم لیگ (ن) کی وفاقی اور صوبائی حکومت نے عملی طور پر گلگت بلتستان کے ہر ہر شعبہ ہائے زندگی میں اصلاحات کا انقلاب برپا کردیا ہے گلگت بلتستان کی تعمیر و ترقی،امن و معیار زندگی کو بلند کرنے کے لئے وزیراعلیٰ گلگت بلتستان نے تاریخ ساز اقدامات کئے ہیں جس کا ثبوت یہ ہے کہ حافظ حفیظ الرحمن نے آج تک ایک اور وعدہ وفا کر دکھایا ہے گلگت بلتستان کی عوام سے سیوریج منصوبے کا وعدہ پورا کرتے ہوئے منصوبے کا سنگ بنیاد رکھ دیا ہے جو دو سال میں مکمل ہوگا اسی کے ساتھ گلگت بلتستان میں سڑکیں،سکول،کالج اور جدید طرز کے ہسپتال بنائے جارہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ پاکستان مسلم لیگ (ن) کی تعمیر و ترقی کے ہمارے منصوبے ہی ہماری کارکردگی اور گلگت بلتستان کے عوام سے ہماری کمٹمنٹ کا واضح ثبوت ہے جبکہ پیپلز پارٹی کی سابقہ وفاقی حکومتوں و پی پی پی کی سابق صوبائی حکومت نے آئینی حقوق کے نام پر گلگت بلتستان کے عوام کو ٹرک کی بتی کے پیچھے ہی لگارکھا تھا اس جماعت نے پہلے مہدی شاہ کی قیادت میں گلگت بلتستان کو جہاں ناقابل تلافی نقصان پہنچایا وہاں پر ایڈاپٹیشن ایکٹ 2012 کے بانی اورپی پی پی جی بی کے موجودہ صدر امجد ایڈوکیٹ ایک بار پھر علاقے کو نقصان پہنچانے کے مزموم عزائم رکھتے ہیں اور عوام کو گمراہ کرنے کی کوششوں میں مصروف ہے۔انہوں نے کہا کہ وزیراعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن عوامی منصوبوں اور گلگت بلتستان کی تعمیر و ترقی کے منصوبوں کا افتتاح کرتے رہینںگے اور پیپلز پارٹی اسی طرح ماتم کرتی رہے گی۔

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

About TNN-GB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*