تازہ ترین

امریکہ کے شہر نیویارک میں گلگت بلتستان سیمینار کا انعقاد۔ ستر سالہ محرمیوں پر گہری تشویش کا اظہار۔

نیویارک( پریس ریلیز) امریکہ کے شہر نیویارک برنٹ ووڈ کے اسلامک سینٹر میں گلگت بلتستان سیمینار منعقد کیا گیا،جس میں بڑی تعداد میں پاکستانی کمیونٹی سمیت نیویارک ونیوجرسی اور میری لینڈ کی ریاستوں میں مقیم گلگت بلتستان کمیونٹی کے سینکڑوں بچے، بڑے اور خواتین نے شرکت کی۔ پروگرام میں میثم رضوی (اقوام متحدہ کے مبصر نمائندہ)، شوکت جعفری (نارتھ امریکہ کی پاکستانی کمیونٹی کے معروف سماجی رہنما و سابق ڈائریکٹر نیویارک سٹیٹ) ڈاکٹر محمد حسین بلتستانی (بین الاقوامی ٹرینر)، اصطفی نقوی (معروف سماجی رہنما)،شاہد حسین بلتستانی (بین الاقوامی شہرت یافتہ منقبت خوان) خالد بلتی (سماجی رہنما)، شاہد شگری (سماجی رہنما) نے بھی خطاب کیا۔ مقررین نے گلگت بلتستان کے سیاسی مسائل و حالات پر روشنی ڈالی۔ مقررین نے واضح کیا کہ گلگت بلتستان اپنی جعرافیائی، سیاحتی، اقتصادی، پانی کے ذخائر اور معدنیات سمیت قدرتی وسائل کے اعتبار سے بہت اہمیت کا حامل علاقہ ہے جس کی اہمیت سی پیک کے لیے گیٹ وے بننے سے مزید بڑھ گئی ہے مگر ان سب کے باوجود پچھلے ستر سالوں سے اسے بنیادی سیاسی حقوق سے دانستہ طور پر محروم رکھا گیا ہے۔ مقررین نے گلگت بلتستان کو مکمل داخلی مختاری یا مکمل آئنی صوبائی حیثیت میں سے ایک آپشن اختیار کر کے علاقے کے احساس محروم کو دور کرنے اور انسانی حقوق کی پامالی کی صورت حال کو بہتر کرنے پر زور دیا ہے۔ مقررین نے سی پیک جیسے بڑے منصوبے میں گلگت بلتستان کو نظر انداز کرنے پر گہری تشیوش کا اظہار کرتے ہوئے اسے وفاقی حکومت کی بدنیتی اور علاقے کے ساتھ دانستہ امتیازی سلوک قرار دیا ہے۔ گلگت بلتستان کو حقوق دینے کے بجائے وہاں کے عوام کی سیاسی اور پُرامن جدو جہد کو بیرونی سازش قرار دینے پر مقررین نے وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان اور وفاقی وزیر داخلہ احسن اقبال کے بیانات کی سختی سے مذمت کی ہے۔ جبکہ گلگت بلتستان سے تعلق رکھنے والے ڈاکٹر محمد حسین نے میڈیا کے نمائندوں کو گلگت بلتستان کے مسائل و حالات پر خصوصی انٹرویو بھی دیا۔ سینکڑوں شرکاء نے گلگت بلتستان کے آئینی حقوق کے لیے جاری سیاسی جدو جہد کے ساتھ بھرپور اظہار یکجہتی کی۔

About TNN-GB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*