تازہ ترین

گلگت بلتستان میں بڑھتے ہوئے صحت کے مسائل۔ تحریر سید ساجد حسین

گلگت بلتستان میں جہاں زندگی کے دیگر سہولیات کا فقدان ہے وہیں صحت کی بنیادی سہولیات کا نہ ہونا نہ صرف پریشانی کا باعث ہے بلکہ ایک المیہ ہے ـ اس خطے میں جہاں قدرتی آب و ہوا اور خوراک کی فراوانی ہے، شرح اموات اور شرح امراض میں خطرناک حد تک اضافہ انتہائی پریشانی کا باعث ہے ـ اس خطے میں حادثاتی شرح اموات قدرے کم ہے مگر طبی اموات کی شرح میں تیزی کے ساتھ اضافہ دیکھنے میں آرہا ہے ـ جس کی بنیادی وجہ صحت کی سہولیاتی مراکز کی غیر فعالی کے ساتھ ساتھ بنیادی صحت کی تعلیم کا نہ ہونا شامل ہے ـ

گلگت بلتستان میں مردوں کے مقابلے میں عورتوں کو کئی گنا زیادہ صحت کے مسائل کا سامنا ہے ـ مردوں میں سب سے زیادہ رپورٹ کی جانے والی بیماریوں میں پیشاب کی نالی کی سوجن، ٹی بی، معدے کے امراض، گردے کی پتھری، اور ہائی بلڈ پریشر جبکہ عورتوں میں ان بیماریوں کے ساتھ ساتھ رحم مادر کے امراض میں اضافہ دیکھنے میں آیا ہے ـ

جبکہ ہیپا ٹائٹس کے مریضوں کی تعداد میں آئے روز اضافہ ہوتا نظر آرہا ہے ـ اس مرض کے پھیلاؤ میں سب سے اہم کردار نیم حکیموں، نرسنگ اسسٹنٹ، ڈینٹل ٹیکنیشن حضرات ادا کررہے ہیں ـ جبکہ عورتوں میں ناک اور کان چھدوانے کے لئے استعمال ہونے والے آلے اس مرض کے پھیلاو کا باعث ہیں ـ ہیپاٹائٹس ماں سے نومولود بچے کو بھی منتقل ہوسکتا ہے جس کے لئے ویکسینیشن لازمی ہے مگر گلگت بلتستان میں حفاظتی ٹیکوں کا رواج بہت کم ہے ـ جس کا نتیجہ یہ ہے کہ ہر سال ہزاروں کی تعداد میں مریضوں کو پاکستان کے دیگر شہروں میں علاج کے لئے دربدر ہونا پڑتا ہے ـ جعلی حکیموں اور عاملوں کی طرف جھکاؤ کے رحجان نے کئی موذی امراض کے خطرناک حد تک پھیلاؤ کو آسان بنادیا ہے جبکہ سہولیات کی عدم دستیابی اور محکمہ صحت میں موجود کالی بھیڑوں کی من مانی اور کرپشن کی انتہا سے بیزار عوام میں خودساخطہ طرز علاج کا رواج عام ہوچکا ہے جس کے نتائج بھیانک نکل رہے ہیں ـ

لوکل اور بین الاقوامی اداروں کی عدم توجہی اور لاپرواہی سے خطے میں صحت کے مسائل خطرناک حدوں کو چھو رہے ہیں ایسے میں وہاں کی سماجی اور فلاحی افراد سمیت تمام تنظیموں کی ذمہ داری بنتی ہے کہ اس خطے مکے عوام میں بنیادی صحت کی تعلیم کے فروغ کے لئے اپنا کردار ادا کریں تاکہ اس جنت نظیر خطے کے لوگ صحت مند زندگی گزارنے میں کامیاب ہو سکیں ـ

 

About admin

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*