تازہ ترین

بدترین لوڈشیڈنگ ، سکردو کے عوام نے وزیر برقیات اور وزیر اعلیٰ سے استعفیٰ کا مطالبہ کردیا۔

سکردو( ٹی این این) سکردو میں بدترین لودشیڈینگ کے خلاف آج سکردو حسن سدپارہ چوک پرقومی الاینس، اور دیگر جماعتوں کے کارکنان اور سول سوسائٹی کے ممبران نے احتجاج کیا۔ اس موقع پر احتجاجی مظاہرہ کرنے والوں نے محکمہ برقیات کے خلاف شدید نعرے بازی کی اور بلتستان جیسے علاقے میں مسلسل لوڈشیڈنگ اور اس حوالے سے حکومتی عدم توجہی پر وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان اور سنئیر وزیر اور وزیر برقیات حاجی اکبر تابان سے مستعفی ہونے کا مطالبہ کردیا۔ اس موقع پر دھرنے سے قومی الائنس گلگت بلتستان کے بانی رہنما عباس سفیر ایڈووکیٹ نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ وفاقی حکومت سکردو میں بجلی کی بحران کے خاتمے کیلئے عواڑی پاور پراجیکٹ شغرتھنگ پاور پراجیکٹ کو ایس ڈی پی میں شامل کرلیا جائے اور ان دونوں پروجیکٹ پر کام جلد شروع کیا جائے ورنہ مسقبل میں سکردو اندھیروں کا راج مکمل قائم ہوجائے گا اس لئے وقت سے پہلے پلان بنایا جائے انہوں نے کہا کہ دھرنے کی تاریخ کے اعلان کے بعد دھرنے کے خلاف اندر سے پروپیگنڈا ایجنٹس کے ذریعے غلط خبریں پھیلائی گئی تھی جس کے باعث لوگوں کو غلط فہمی کا شکار کیا گیا. جس کی ہم پر زور مذمت کرتے ہیں قومی الائنس کے نوجوان رہنما لیاقت اعظمی ایڈوکیٹ اور وزیر حسنین رضا کا بھی خطاب کرتے ہوئےبجلی بحران کے ذمہ داروں کے خلاف کرپشن کیسز کی تحقیقات اور احتساب کا مطالبہ کردیا اور بجلی کی منصفانہ تقسیم پر وی ائی پی کلچرل کا حاتمہ کیا جائے ورنہ حالات خراب ہوسکتا ہے
بعدازں احتجاجی مظاہرے کی قیادت کرنے والے رہنماوں نےسنئیروزیر اور وزیر برقیات سے لوڈشیڈنگ کے اہم مسائل کی حل کے حوالے سے خصوصی ملاقات کی جس میں فیصلہ کیا ہےحکومت فوری طور پر سرمیک پاور ہاوس بجلی کی ترسیل کو سکردو شہر تک یقینی بنائے گا، جلد ڈونرز میٹنگ بلا کر غواڑی اور شغرتھنگ پاور پراجکٹ پر ایک ہفتے کے اندار کام شروع کیا جاے گا۔ اسی طرح سکردو کے اسپیشل لائنوںکو دو دنوں کے اندار کاٹ دیا جاے گا۔

  • 114
  •  
  •  
  •  
  •  
    114
    Shares
  •  
    114
    Shares
  • 114
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

About TNN-GB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*