تازہ ترین

ایم ایف کے ساتھ کیا معاملہ چل رہا ہے؟وفاقی وزیر خزانہ اسد عمر نےتفصیلات بتا دی۔

پشاور (آئی این پی/ٹی این این) وفاقی وزیر خزانہ اسد عمر نے کہا ہے کہ آئی ایم ایف کے ساتھ معاہدہ جلد ہو جائے گا، یقینی بنائیں گے کہ یہ آئی ایم ایف کے ساتھ آخری معاہدہ ہو، آئندہ بجٹ میں ٹیکس اصلاحات اور ٹیکس جمع کرانے کا طریقہ آسان بنائیں گے، ٹیکس نیٹ بڑھائے بغیر کوئی ملک ترقی نہیں کر سکتا، بنیادی مسائل حل ہو جائیں تو بھارت کیس اتھ تجارت میں بہتری آئے گی، ایف بی آر کی جانب سے ہر اساں کرنے کے باعث ٹیکس نیٹ نہیں بڑھتا، خطے کے تمام ممالک کے ساتھ اچھے تعلقات چاہتے ہیں، افغانستانمیں امن کیلئے پاکستان ہر ممکن کردار ادا کر رہا ہے۔پیر کو چیمبر آف کامرس سے خطاب کرتے ہوئے وزیر خزانہ اسد عمر نے کہا کہ کرک، لکی مروت اور کوہاٹ میں گیس دریافت ہوئی ہے، دریافت ہونے والے قدرتی وسائل پر پہلا حق صوبے کا ہوتا ہے، برآمدات میں اضافے سے معیشت مضبوط ہو گی اور روزگار کے مواقع بڑھیں گے، ہائیڈل اور گیس شعبے کو ترقی دینے کی ضرورت ہے، افغانستان میں امن کیلئے پاکستانہر ممکن کردار ادا کر رہا ہے۔ انہوں نے کہاکہ خطے کے تمام ممالک کے ساتھ اچھے تعلقات چاہت ہیں، ایران اور افغانستان کے ساتھ تجارت کیلئے خصوصی اقدامات کرنے کی ضرورت ہے، خیبرپختونخوا کو پانی دیا ہے جس سے سستی بجلی پیدا کی جا سکتی ہے، کے پی میں گیس کے سب سے زیادہ ذخائر ہیں، ہمیں بڑے پیمانے پر کام کرنے کی ضرورت ہے، دنیا میں سیاحت آمدن کا بڑا شعبہ ہے، کے پی میں بہت علاقے ہیں جہاں صنعتیں نہیں لگا سکتے، اگر نوکریاں دینی ہیں تو سیاحت کو فروغ دینا ہو گا، ترکی میں سیاحت سے سالانہ آمدن 44ارب ڈالر ہے، بنیادی مسائل حل ہو جائیں تو بھارت کے ساتھ تجارت میں بہتری آئے گی، آئی ایم ایف سے معاہدے کے بہت قریب پہنچ چکے ہیں، آئی ایم ایف کے ساتھ معاہدے کو آخری بنائیں گے۔ اسد عمر نے کہا کہ ایف بی آر کی جانب سے ہراساں کرنے سے ٹیکس نیٹ نہیں بڑھتا، چاہتے ہیں کہ ٹیکس کو لیکشن میں آسانیاں پیدا کریں گے، آئندہ بجٹ میں ٹیکس اصلاحات ، ٹیکس جمع کرنے کا طریقہ آسان بنائیں گے، ٹیکس ریفنڈز کے طریقہ کار کی منظوری دے دی جس کے نتائج جلد آئیں گے، ٹیکس نیٹ بڑھائے بغیر کوئی ملک ترقی نہیں کر سکتا۔

  •  
  • 9
  •  
  •  
  •  
  •  
    9
    Shares

About TNN-GB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*