تازہ ترین

ڈسٹرک ہیڈکوارٹر ہسپتال چلاس میں سہولیات کا فقدان، ڈاکٹروں نے ہڑتال کا اعلان کردیا۔

چلاس(محمدقاسم)پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن دیامر استور کے صدد ڈاکٹر سید مصطفی کا کابینہ کے ہمرا اپنے مطالبات کے حق میں پریس کانفرنس ڈی ایچ کیو ہاسپٹل چلاس میں 24 سپیشلسٹ ڈاکٹروں کی جگہ صرف 6 ڈاکٹرز اپنے فرائض منصبی احسن طریقے سے نبھا رہے ہیں مگر ڈاکٹروں کی کمی کی وجہ سے مریضوں اور ڈاکٹروں کو شدید پریشانی کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔جس کی وجہ سے ہسپتال کا نظام بری طرح متاثر ہوتا جا ریا ہے انہوں نے حکومت سے مطابعہ کرتے ہوئے کہا کہ ڈی ایچ کیو ہاسپٹل چلاس کے لئے درکار انیس سپیشلسٹ ڈاکٹرز کی فوری تبادلے عمل میں لایا جایا اگر یہ ممکن نہیں تو ڈی ایچ کیو ہاسپٹل چلاس کے تمام ڈاکٹروں کو گلگت تبادلہ کیا جائے۔انہوں نے کہا کہ ڈی ایچ کیو ہاسپٹل چلاس میں ڈاکٹروں کی کمی اور حکومت کی سرد مہری کی وجہ سے مسائل میں آئے روز اضافہ ہوتا جا رہا ہے۔ہسپتال میں ڈاکٹروں کی کمی کی وجہ سے ڈیوٹی پہ مامور ڈاکٹروں کو سخت ذہنی پریشانی کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے انہوں نے کہا کہ پچھلے چھ مہینے سے صوبائی انتظامیہ سے با رہا اپنے مسائل کے بارے آگاہ کیا۔ مگر کسی قسم کی کوئی شنوائی نہیں ہوئی۔ڈی ایچ کیو ہاسپٹل چلاس کے ساتھ جان بوجھ کر سوتیلی ماں جیسا سلوک کیا جا رہا ہے۔اسکی جتنی الفاظ میں مذمت کی جائے کم ہے۔انہوں نے کہا اگر حکومت نے ہمارے مطالبات پہ عملدامد نہیں کیا تو ابتدائی طور پہ کل سے علامتی طور پہ تین دن کالی پٹیاں باندھ کے او پی ڈی میں مریضوں کا چک آپ کیا جا یگا دوسرے مرحلے میں تین دن تک دو گھنٹے کے لئے او پی ڈی بند کر دی جائے گی اور آخر میں مطالبات کئ منظوری تک او پی ڈی اور پرائویٹ کلینک کو بھی بند کر دیا جایگا پریس کانفرنس میں ڈاکٹر منصور الحق ڈاکٹر محمد نواز ،ڈاکٹر انعام اللہ اور ڈاکٹر اکرام اللہ نے شرکت کی۔

  •  
  • 8
  •  
  •  
  •  
  •  
    8
    Shares

About TNN-GB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*