تازہ ترین

سپریم کورٹ نے حقوق گلگت بلتستان کے حوالے سے تفصیلی فیصلہ جاری کردیا۔

اسلام آباد(ٹی این این )سپریم کورٹ آف پاکستان نے گلگت بلتستان آئینی حقوق کے معاملے پر فیصلہ جاری کردیا۔ جسٹس اعجازالاحسن نے فیصلہ پڑھ کر سنایا۔عدالت عظمیٰ نے اپنے فیصلے میں کہا کہ گلگت بلتستان اور آزاد کشمیر کی موجودہ حیثیت میں کوئی تبدیلی نہیں ہوگی، ان علاقوں کی آئینی حیثیت استصواب رائے سے طے کی جائے۔سپریم کورٹ آف پاکستان نے فیصلے میں کہا کہ بھارت اورپاکستان زیرانتظام علاقوں کوزیادہ سے زیادہ حقوق دینے کے پابند ہیں۔
تفصیلات کےمطابق عدالت نے واضح انداز میں کہا ہے کہ آرٹیکل 124 کے برعکس کوئی حکم نافذ نہیں ہو سکتا اور نہ ، فیصلہ آئین پاکستان کے کسی شق کوختم یا تبدیل ہو سکتی ہے۔سپریم کورٹ نے حکم دیا ہے کہ گلگت بلتستان کی متنازعہ حیثیت کو برقرار رکھتے ہوئے مسلہ کشمیر کی حل کیلئے رائے شماری ہونے تک گلگت بلتستان کے عوام کو بنیادی حقوق فراہم کیے جائیں، فیصلے میں کہا گیا ہے کہ الجہاد ٹرسٹ کیس1999 میں سپریم کورٹ نے حکومت کوگلگت کوبنیادی آزادی دینے کا پابند کیا ہے۔ فیصلہ گلگت بلتستان کی عدالتیں جی بی آرڈیننس کے ساتھ آئین کی بھی تابع ہونگی۔ سپریم کورٹ نے مزید کہا ہے کہ گلگت بلتستان کے کسی عدالت کا فیصلہ پاکستان کے کسی شہر یا شہری پر اطلاق نہیں ہوگا بلکہ گلگت بلتستان کے عدالتوں کا دائرہ اختیار گلگت بلتستان تک ہی محدود ہوگا۔ سپریم کورٹ نے مزید کہا ہے کہ جی بی سپریم اپیلٹ کورٹ صدارتی آر ڈیننس کالعدم بھی قرار نہیں دے سکتی۔

  •  
  • 33
  •  
  •  
  •  
  •  
    33
    Shares

About TNN-GB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*