تازہ ترین

محکمہ تعمیرات عامہ بلتستان کے چیف انجینئر نے ٹھیکوں کے پری بولی لگانا شروع کردیا۔

سکردو(ٹی این این تحقیقاتی رپورٹ) محکمہ تعمیرات عامہ میں سب سے زیادہ کرپشن ہونے کی وجہ سے سب سے بدنام محکمہ تصور کیا جاتا ہے چپڑاسی سے لیکر محکمے کا سیکرٹری تک رشوت خوری میں ملوث ہوتے ہیں۔ اسی محکمے میں گلگت بلتستان کے صوبائی حکومت کے ارکان اسمبلی بھی زیادہ تر داخل اندازی کرتے ہیں کیونکہ سب سے زیادہ رشوت ملنے والے پوسٹوں پر ارکان اسمبلی کے ممبران کو رشوت دیکر ان پوسٹوں تک پہنچنے کیلئے کلرک سب انجینئر ایس ڈی او ایکسین اور چیف انجینئر تمام حربہ استعمال کرکے پہنچ جاتا ہے اور جو رشوت ٹھیکیداروں اور قومی خزانے کو نقصان پہنچا کر لیتا ہے اور اس کا حصہ صوبائی وزراء تک پہنچا دیتا ہے ۔محکمہ تعمیرات کے چیف انجینئر اور سرکل کے اے سی اور ایکسین مل کر کرپشن کا آئے روز نئے فارمولا تیار کرتے ہیں۔ اپ بلتستان کے محکمہ تعمیرات عامہ کے چیف انجینئر وزیر تاجور جو کافی عرصے سے بلتستان کا چیف انجینئر بنا ہوا ہے انہوں نے اے سی عامر کے ساتھ مل کر کرپشن کا ورلڈ ریکارڈ بنانے کیلئے بھی تیار ہے۔ بلتستان میں جو بھی ٹینڈر ہوتا ہے ان کا پری بنایا جاتا ہے اور پری بھی صوبائی وزراء کے ساتھ مل کر بند کمرے میں بنایا جاتا ہے اور جو ٹھیکیدار سب سے زیادہ رشوت دیا جاتا ہے ان ٹھیکیداروں کو پری کے لسٹ میں رکھا جاتا ہے اور ٹھیکیدار کے ساتھ مل کر فل ریٹ میں ٹھیکہ اسی ٹھیکیدار کا دیا جاتا ہے اور ساتھ میں ملکی خزانے کو بھی چونا لگاتے ہوئے نقصان پہنچایا جاتا ہے اور گلگت بلتستان میں ایف آئی اے اور نیب کا جو ادارہ کام کررہا ان کا ارادہ اج تک محکمہ تعمیرات عامہ کے افسران کے خلاف ایک بھی کاروائی نہیں کیا گیا جو سوالیہ نشان ہے کیا ں

  •  
  • 26
  •  
  •  
  •  
  •  
    26
    Shares

About TNN-GB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*