تازہ ترین

قراقرام بورڈ کا بلتستان کے ساتھ امتیازی سلوک کا سلسلہ جاری۔

سکردو(ٹی این این)قراقرام بورڈ کا بلتستان کے ساتھ امتیازی سلوک کا سلسلہ جاری ،فیڈرل بورڈ سے الحاق کی سزا دینے کا پلان تیار ،جان بوجھ کر مائیگریشن سرٹیفیکیٹس فیس اور تمام تقاضے پورے کرنے کے باوجود جاری نہیں کیا جارہا ہے جس کے باعث ہزاروں طلبہ کا مستقبل داو پر لگ گیا ہے تفصیلات کے مطابق کے آئی یو بورڈ کی نااہلی سے تنگ آکرگلگت بلتستان کے کالجوں نے فیڈرل بورڈ سے الحاق کرکے آئندہ امتحانات فیڈرل بورڈٖ سے لینے کا فیصلہ کیا تھا قانون کے مطابق ایک بورڈ سے کسی دوسرے بورڈ میں جانے کے لئے اجازت نامے کی ضرورت ہوتی ہے جس کے تحت گلگت بلتستان کے کالجوں نے طلباء کی مائیگر یشن کے لئے مقررہ فیس کے ساتھ دیگر مطلوب کاغذات بھجوا نے کے باوجود قراقرم یونیورسٹی بورڈ کسی طرح ان کو مائیگریشن جاری کرنے میں سنجیدہ نظر نہیں آتا۔ بتایا جاتا ہے کہ فیڈرل بورڈ میں امتحانی فارم جمع کرانے کی آخری تاریخ 3جنوری تھا تاہم قراقرم بورڈ کی اہلیت کو ملحوظ نظر رکھتے ہوئے ڈائریکٹر کالج نے فیڈرل بورڈ سے بات کرکے فارم جمع کرنے کی تاریخ 15جنوری تک بڑھوا دی ہے لیکن بورڈ کے روئیے سے لگتا ہے کہ تاریخ گزر جانے سے قبل مائیگریشن نہیں ملے گا جس کے باعث ہزاروں طلبہ کا مستقبل داو پر لگ جانے کا خطرہ پیدا ہوگیاہے ذرائع کا کہنا ہے کہ سکردوکے بعض کالجز میں مائیگریشن پہنچ چکے ہیں جبکہ بعض میں 25دسمبر کو بھیجے گئے مائی گریشن ابھی تک نہیں پہنچا ہے اس حوالے رابطہ کرنے پر کے آئی یو مائیگریشن سیکشن کا انچارچ عالم گیر نے بتایا کہ اس وقت لوڈ بہت ہے اس لئے سکردو سے آئی ہوئی ڈاک پڑی ہوئی ہے ہم انہیں ہاتھ نہیں لگا سکتے آپ کنٹرولر عارف سے بات کریں اور ہمیں اضافی نفری دیدیں تو ہم مائی گریشن کا معاملہ دیکھ سکتے ہیں ان کا کہنا تھا کہ بلتستان والوں کو فیڈرل بور ڈ سے الحاق کی پڑی ہے وہ مزے سے فیڈرل بورڈ سے امتحان دے لیں ہم اپنے حساب سے کام کریں گے

  •  
  • 32
  •  
  •  
  •  
  •  
    32
    Shares

About TNN-GB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*