تازہ ترین

ضلع کھرمنگ میں غیرمتواز ن اخباری رپورٹینگ سے عوام پریشان اور سرکار خوش۔

کھرمنگ(تحریر نیوز نیٹ ورک)گلگت بلتستان بھر کی طرح نوزائدہ ضلع کھرمنگ میں پریس کلب اور عہدے داران تو موجود ہیں لیکن یہاں کے مسائل کی طرف کوئی توجہ دینےو الا نہیں۔ ضلع بھر میں کئی اخبارات کے نمائندے ہیں جو پارٹ ٹائم نوکری کے طور پر اخباری نمائندگی کے فرائض سرانجام دیتے ہیں ۔ عوامی حلقوں کہنا ہے کہ محدود رپورٹینگ میں چند ایک کے علاوہ دیگر اخباری نمائندے پسند ناپسند کی بنیاد پر خبریں شائع کرواتے ہیں اور اس حوالے سے عوامی سطح پر کئی بار متعلقہ اخبارات کے مالکان کو نشاندہی کے باوجود کوئی پوچھنے والا نہیں۔
عوامی حلقوں کا یہ بھی کہنا ہے ضلع کھرمنگ کے پیچیدہ مسائل کی حل کیلئے اخباری نمائندوں کی عدم تعاون اور اُنکا شاباشی وصول کرنے کیلئے سرکار ی آشیرباد کو صحافتی امور کے طور پر نبھانے سے تنگ آکر عوام سوشل میڈیا کو مسائل ارباب اختیار اور اقتدار کو پونچانے کا واحد ذریعہ سمجھتے ہیں۔سوشل میڈیا صارفین کا بھی اس حوالے سے شدید ردعمل دیکھنے کو مل رہا ہے۔ صارفین کہتے ہیں کہ گلگت بلتستان کے اخبارات میں ضلع کھرمنگ کے حوالے سے عوامی مسائل پر مبنی خبروں کم جبکہ سرکاری بیانات اور سب اچھا اور پسند ناپسند کی بنیاد پر جھوٹی خبریں ذیادہ پڑھنے کا ملتی ہے۔سوشل میڈیاپرصارفین کی جانب سے ضلع کھرمنگ میں صحافتی اقدار کی پامالی اس مقدس پیشے کو من مانی کی بنیاد پر چلانےپر مذمت اور افسوس کا اظہار بھی کیا جارہا ہے۔
اخبار مالکان کو چاہئے کہ ضلع میں مستقبل طور پر تنخواہ یافتہ اور تربیت یافتہ نمائندے کی تعیناتی کو یقینی بنائیں تاکہ صرف سرکاری خبروں کے علاوہ عوامی مسائل کرپشن ،اقرباء پروری اور سرکاری ٹھیکوں میں بندربانٹ،تعلیمی،پانی،بجلی،صحت کے مسائل جیسےاہم مسلوں کی طرف توجہ دے سکے۔ اس وقت ضلع بھر میں اس حوالے سے نہ کوئی تحقیقات کرنے والا ہے اور نہ ہی پارٹ ٹائم نمائندے اس طرح کے اہم ایشوز کی طرف توجہ دیتے ہیں۔

  •  
  • 22
  •  
  •  
  •  
  •  
    22
    Shares

About TNN-ISB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*