تازہ ترین

دیامر میں اسکولوں کو نذر آتش کرنے والے مرکزی ملزم جرگے کی کوششوں سے گرفتار۔

چلاس(تحریر نیوز نیٹ ورک) دیامر میں اسکولوں کو نذرِ آتش کرنے والے اہم مجرم ملوث ملزم قاری ہدایت اللہ کو گرفتار کرکے داریل گرینڈ جرگہ نے سیکورٹی اداروں کے ساتھ پولیس کے حوالہ کردیا۔
پولیس ذرائع کے مطابق گرفتار کیا گیا شخص اسکولوں کو نذرِ آتش کرنے کے معاملے میں مرکزی ملزم ہے جسے داریل سے گرفتار کیا گیا جنکا تعلق داریل منیکال ساکن گیوٹ سے ہے۔
پولیس ذرائع کے مطابق اسکول نذرِ آتش کرنے کے معاملے میں اب تک 40 افراد کو گرفتار کیا جاچکا ہے جبکہ مزید 15 انتہائی مطلوب ملزمان کی تلاش جاری ہے۔
اس ضمن میں دیامر جرگے کے رکن اوررکن گلگت بلتستان قانون ساز اسمبلی وزیر حیدر خان نے میڈیا کے نمائندوں کوبتایا کہ جرگے نے مطلوب ملزمان کے رشتہ داروں کو وارننگ دی تھی کہ اسکول واقعے میں ملوث ملزمان کو پولیس کے حوالے کریں بصورت دیگر سیکیورٹی اہلکاروں کے آپریشن سمیت کوئی بھی کارروائی کیے جانے پر وہ خود ذمہ دار ہوں گے۔ اُنکا مزید کہنا تھا کہ جرگے کے انتباہ کے بعد مطلوب ملزمان کو گھر کے افراد نے سیکیورٹی فورسز کے حوالے کیا، انہوں نے بتایا کہ ملزمان کی گرفتاری میں عدم تعاون کرنے والے خاندانوں کا سماجی بائیکاٹ بھی کردیا جاتا ہے تاکہ دباؤ کے ذریعے قانون کی بالادستی کو یقینی بنایا جاسکے۔
یار درہےکہ رواں برس اگست کے اوائل میں گلگت بلتستان میں نامعلوم شرپسندوں نے رات میں لڑکیوں کی تعلیم کے لیے قائم تقریباً 15 اسکولوں کو نذر آتش کردیا تھا۔ اس حوالے سےچیف جسٹس آف پاکستان میاں ثاقب نثار نے 4 اگست کو دیامر اور چلاس میں دہشت گردوں کی جانب سے اسکولوں کو نذرِ آتش کرنے کے واقعے پر ازخود نوٹس لیا تھا۔اس سلسلے میں پولیس کی جانب سے دعویٰ بھی سامنے آیا تھا کہ گلگت بلتستان کے علاقے دیامر میں لڑکیوں کے 14 اسکولوں کو نذر آتش کرنے والا مشتبہ دہشت گرد سرچ آپریشن کے دوران فائرنگ کے تبادلے میں ہلاک اور اہلکار جاں بحق ہوگیا۔بعد ازاں گلگت بلتستان کے ضلع چلاس میں اسکول نذر آتش کے واقع پر صوبائی حکومت نے تحقیقات کے لیے جوائنٹ انویسٹی گیشن ٹیم (جے آئی ٹی) تشکیل دی تھی۔
ملزمان کی تلاش میں کیے جانے والے آپریشن کے دوران 87 افراد کو پولیس نے حراست میں لیا تھا جن میں سے 22 ملزمان کو جے آئی ٹی نے ذمہ دار ٹھہرایا جبکہ دیگر 65 افراد کو تحقیقات کے بعد رہا کردیا گیا۔

  •  
  • 17
  •  
  •  
  •  
  •  
    17
    Shares

About TNN-ISB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*