تازہ ترین

پاکستان مزید کسی کیلئے کرائے کے فوجی کا کام نہیں کرے گا۔ وزیر اعظم عمران خان

اسلام آباد (ویب ڈیسک) وزیر اعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ پاکستان کسی کیلئے بھی کرائے کے فوجی کا کام نہیں کرے گا بلکہ وہی کرے گا جو اس کے مفاد میں ہوگا۔ پاکستان میں دہشتگردوں کی کوئی پناہ گاہ نہیں ہے، نہیں چاہتے کہ امریکہ جلد بازی میں افغانستان سے نکل جائے ۔ افغانستان میں قیام امن پاکستان کے مفاد میں ہے اور پاکستان مذاکراتی عمل کیلئے ہر ممکن کوشش کرے گا۔ سپر پاور کے ساتھ کون بہتر تعلقات نہیں رکھنا چاہتا لیکن پاکستان امریکہ کے ساتھ ویسے ہی تعلقات چاہتا ہے جیسے دو طرفہ تعلقات چین کے ساتھ ہیں۔
امریکی اخبار واشنگٹن پوسٹ کو دیے گئے انٹرویو میں وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ ہم واشنگٹن کے ساتھ بہتر تعلقات چاہتے ہیں لیکن ہم امریکہ کی جنگ نہیں لڑیں گے۔ میری ٹرمپ کے ساتھ ٹوئٹر پر کوئی جنگ نہیں ہوئی بلکہ میں نے ریکارڈ کی درستی کی ۔ یہ اس وجہ سے ہوا کیونکہ ہمیں افغانستان میں امریکہ کی ناکام پالیسیوں کا ذمہ دار قرار دیا جارہا ہے۔ٹرمپ کی جانب سے سابق حکمرانوں پر نہیں بلکہ پاکستان پر تنقید کی گئی تھی اور الزام لگایا گیا تھا کہ پاکستان میں دہشتگردوں کی پناہ گاہیں ہیں، لیکن پاکستان میں دہشتگردوں کی کوئی پناہ گاہ نہیں ہے۔
ایک سوال کے جواب میں وزیراعظم پاکستان نے کہا کہ نائن الیون میں کوئی پاکستانی ملوث نہیں تھا، اسامہ کی ہلاکت کے معاملے پر پاکستان پر بھروسہ نہیں کیا گیا، ، روس جب افغانستان سے نکلا تو امریکہ نے پاکستان کو تنہا چھوڑ دیا۔ پاک افغان سرحد پر دہشتگردوں کی آمد و رفت مشکل ہے۔

  •  
  • 13
  •  
  •  
  •  
  •  
    13
    Shares

About TNN-ISB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*