تازہ ترین

وزیر اعظم نے کل وفاقی کابینہ کا اجلاس طلب کرلیا،گلگت بلتستان ریفارمز آرڈننس ایجنڈے میں شامل۔

اسلام آباد( تحریر نیوز نیٹ ورک) وزیر اعظم عمران خان نے کل وفاقی کابینہ کا اجلاس طلب کرلیا ۔ اس اجلاس میں بہت سے ایشوز کے ساتھ گلگت بلتستان عبوری صوبے کے حوالے سے مشاورت بھی ایجنڈے میں شامل ہے۔ ذرائع کے مطابق وزیر اعظم عمران خان گلگت بلتستان کے حوالے سے سپریم کورٹ کے فیصلے پر بریفنگ دیں گے اور سپریم کورٹ کے حکم پر گلگت بلتستان آرڈر 2018 میں مزید ترمیم کرکے گلگت بلتستان ریفارمز آرڈر 2018 کے نام سے ایک نیا پیکج منظور کرایا جائے گا۔
ذرائع کے مطابق وفاقی کابینہ کا اجلاس کل وزیر اعظم عمران خان کی زیر صدارت وزیر اعظم ہاؤس میں ہو گا۔ جس میں 20 نکاتی ایجنڈے پر غور کیا جائے گا۔ اجلاس میں کابینہ اپنے فیصلوں پر عمل درآمد کا جائزہ لے گی جب کہ گلگت بلتستان کو عبوری صوبہ بنانے اور اصلاحات کا پیکج بھی ایجنڈے میں شامل ہے۔ اجلاس میں ٹیکسٹائل سیکٹرز میں شامل پانچ صنعتوں کو زیرو ریٹ پر گیس اور آر ایل این جی کی فراہمی پر بھی غور کیا جائے گا۔
یاد رہے گلگت بلتستان آرڈر 2018 کو گلگت بلتستان قانون ساز اسمبلی میں متحدہ اپوزیشن اور عوامی ایکشن کمیٹی مسترد کرچُکے ہیں اُنہوں مطالبہ کیا ہوا ہے کہ گلگت بلتستان کو ایکٹ آف پارلمینٹ سے ہٹ کوئی مزید کوئی بھی پیکج نام اور شکل بدل کر قبول نہیں کیا جائے گا۔ گلگت بلتستان کے عوام کا یہ بھی مطالبہ ہے کہ اگر وفاق مسلہ کشمیر کی وجہ سے گلگت بلتستان کو مکمل طور پر صوبہ نہیں بناسکتے تو اس خطے کو مسلہ کشمیر کے تناظر میں متنازعہ حیثیت کے مطابق حقوق دیں اور 1974 سے جاری قانون باشندہ سٹیٹ سبجیکٹ رول کی خلاف ورزیوں کو روکیں اور سی پیک سمیت دیگر اہم پراجیکٹ میں گلگت بلتستان کو ایک فریق کے طور پر قبول کریں۔ اب دیکھنا یہ ہے کہ تحریک انصاف کی حکومت بھی ماضی کے حکومتوں کی طرح پیکج مسلط کرتے ہیں کہ بین الاقوامی تناظر میں خطے کی بڑھتی ہوئی اہمیت اور پاکستان دشمن عناصر کا راستہ روکنے کیلئے اس خطے کی ستر سالہ محرمیوں کا یہاں کے عوام کے مطالبے کی بنیاد پر حقوق دیتے ہیں۔

  •  
  • 77
  •  
  •  
  •  
  •  
    77
    Shares

About TNN-GB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*