تازہ ترین

روالپنڈی میں گلگت بلتستان سے تعلق رکھنے والے طالب علم پرچھریوں سے حملہ،نوجوان شدید زخمی

راولپنڈی(ٹی این این کرائمز رپورٹر)صادق آباد محلہ چھوٹا بازار راولپنڈی کے رہائشی اور گلگت بلتستان کے علاقہ غذر سے تعلق رکھنے والے پندرہ سالہ طالب علم اور اس کے ماموں کو محلے کے اوباش شخص نے چاقو سے پے در پے وار کرکے شدید زخمی کردیا۔پولیس تھانہ صادق آباد نے مبینہ طورپر ملزم پارٹی کے ساتھ سازباز کرکے اس کے خلاف قانونی کارروائی کرنے سے ہاتھ اٹھا لیا۔متاثرہ خاندان نے اعلیٰ حکام سے نوٹس لیتے ہوئے انصاف فراہم کرنے کی اپیل کی ہے۔معلوم ہوا ہے کہ بلال ہسپتال کے عقب میں صادق آباد کے علاقہ محلہ چھوٹابازار کے رہائشی اورغذر سے تعلق رکھنے والی ایک فیملی اپنے محلہ کے رہائشی اوباش شخص کے ہاتھوں شدیدعدم تحفظ کا شکار ہے۔یکم دسمبر کی رات دس بجے غذرسے تعلق رکھنے والے پندرہ سالہ طالب علم وقار حسین نے اپنے پڑوس کے رہائشی ہارون جس کا تعلق گجرات سے بتایا جاتا ہے کو گھر کے پاس منڈلانے اورچرس پینے سے منع کیا جس پر وہ بگڑ گیا اورچاقو سے حملہ کرکے اسے لہولہان کردیا۔شورشرابہ سن کر وقار کا ماموں دولت جان بھی باہرآیااورچھڑانے کی کوشش کی توملزم نے اسے بھی چاقو سے حملہ کرکے زخمی کردیا۔بعدازاں زخمیوں کو سنٹرل ہسپتال راولپنڈی لے جاکر داخل کردیاگیا اورمتاثرہ خاندان کی طرف سے حملہ آور کے خلاف قانونی کارروائی کے لئے تھانہ صادق آباد پولیس کوتحریری درخواست دی گئی۔تاہم پولیس نے ملزم پارٹی کو تھانے بلانے کے بعد مبینہ طورپر اس کے ساتھ سازکرلی اورمتاثرہ خاندان کو واپس گھربھجوا دیا۔متاثرہ خاندان کا کہنا ہے کہ پولیس نے ملزم کے خلاف مقدمہ درج کرنے سے انکار کردیا۔ہمارے اصرار پر اے ایس آئی محمدسلیم نے یہ تک کہہ دیا کہ جائوایک دوسرے کو جان سے ماردو،ہم کچھ نہیں کرسکتے۔زخمی نوجوان دولت جان نے بتایا کہ ملزم ہارون محلہ میں دندناتا پھر رہا ہے اور ہمیں سنگین نتائج کی دھمکیاں دے رہا ہے جبکہ پولیس ٹس سے مس نہیں ہو رہی۔متاثرہ خاندان نے اعلیٰ حکام سے نوٹس لیتے ہوئے انصاف فراہم کرنے کی اپیل کی ہے۔معلوم ہواہے کہ ملزم ہارون نے تین ماہ قبل بھی غذرسے تعلق رکھنے والی ایک فیملی کو اس قدر ہراساں کیا کہ وہ محلہ چھوڑنے پر مجبورہوگئے۔بتایا گیا ہے کہ ملزم ہارون جرائم پیشہ ہے اور سرعام نشہ بیچتا اورپیتا ہے۔جس کے خلاف پولیس سب کچھ جاننے کے باوجود بھی خاموش ہے۔ٹی این این کے رابطہ کرنے پر کیس کے تفتیشی آفیسراے ایس آئی محمدسلیم نے بتایا کہ متاثرہ دونوں نوجوانوں کی میڈیکل رپورٹ سامنے آنے پرملزم کے خلاف مقدمہ درج کیاجائے گا۔انہوں نے مزیدکہاکہ متاثرہ خاندان کے ساتھ کسی طورپر زیادتی نہیں ہونے دیں گے ۔انہوںنے بتایا کہ فریقین کا پہلے بھی دو سے تین بارجھگڑا ہوچکا ہے۔

  •  
  • 6
  •  
  •  
  •  
  •  
    6
    Shares

About TNN-GB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*