تازہ ترین

پاکستان میں شامل ہونے کیلئے گلگت بلتستان کے لوگوں نے قربانیاں دی ہے۔ حشمت اللہ خان کا اوپن فورم میں گفتگو۔

سکردو(ٹی این این اوپن فورم) پاکستان تحریک انصاف گلگت بلتستان کے سابق کنونیئر ڈی آئی جی ریٹائرڈ حشمت اللہ نے ٹی این این اوپن فورم سے خصوصی بات گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کے ساتھ شامل ہونے کیلئے گلگت بلتستان کے لوگوں نے قربانیاں دی ہے اور پاکستان کے بنا گلگت بلتستان ادھورا ہے۔ پاکستان میں سب سے زیادہ محب وطن گلگت بلتستان میں موجود ہے اس لئے گلگت بلتستان کا حقوق کا مسلہ حل کرنا ہوگا عبوری صوبائی سیٹ اپ دیا جائے۔
انہوں نے کہاکہ سی پیک سب اہم منصوبہ ہے اور گلگت بلتستان کے محب وطن لوگ اس منصوبے کو اپنا جان دیکر کامیاب بنائیں گے۔ سی پیک منصوبے کے بعد گلگت بلتستان کا تقدیر بدل جائیگا اور سابقہ حکومت نے سی پیک منصوبے کو ناکام بنانے کی ہر ممکن کوشش کیا گیا اور سی پیک منصوبے میں 33 ارب ڈالر صرف بجلی کے منصوبوں پر مختص کیا ہوا تھا اور سابقہ حکومت نے ان 33 ارب ڈالرسے کوئلے سے بجلی بنانے کے منصوبوں پر خرچ کیا گیا اگر دیامر بھاشا ڈیم بونجی ہائیڈرو پاور پروجیکٹس پر 33 ارب ڈالر خرچہ کرتا تو اج پورے ملک میں بجلی اور پانی کا مسلہ حل ہو چکا ہوتا مگر نواز حکومت نے اپنا کمیشن کے خاطر دنیا کا مہنگا ترین بجلی پیدا کرنے کیلئے کوئلے سے بجلی پیدا کرنے کا منصوبہ بنایا جارہا ہے۔
اُنکا کہنا تھا کہ ہمارے قائد محسن پاکستان وزیر اعظم عمران خان نے سی پیک منصوبے کو کامیاب بنانے کیلئے لائحہ عمل بنایا ہے اور سی پیک میں گلگت بلتستان کو بھی حصہ دیا جارہا ہے اور نواز شریف نے تو سی پیک کو متنازعہ بنایا ہے انہوں نے کہا کہ سی پیک منصوبے سے ہماری تہذیب و تمدن کو بھی نقصان پہنچ سکتا ہے اس کو بھی بچانا ہوگا۔ سی پیک منصوبے سے معاشی انقلاب آنے کے بعد پورے ملک سے بےروزگاری کا خاتمہ ہوگا۔
انہوں نے مزید کہا کہ ہماری وفاقی حکومت نے ملک بھر میں سیاحت کو فروغ دینے کیلئے منصوبہ بنایا جارہا ہے اج دنیا بھر میں سیاحت کے شعبے کو صنعت کا درجہ دے کر سالانہ اربوں ڈالر کمایا جارہا ہے ۔مگر افسوس سابقہ حکمرانوں نے کبھی بھی اس اہم شعبے کی طرف توجہ ہی نہیں دیا اپ ہماری حکومت گلگت بلتستان سمیت ملک بھر میں سیاحت کی شعبے کو فروغ دینے کیلئے منصوبہ بنایا جارہا ہے۔ انہوں ایک سوال کے جواب میں کہا کہ گلگت بلتستان کو پاکستان کے باقی صوبوں کے برابر حقوق دیا جارہا ہے ۔صرف ہمیں قومی اسمبلی اور سینٹ تک رسائی حاصل نہیں ہے اور پنچاب اور سندھ کے دیہی علاقوں سے زیادہ ہمارے دیہاتوں میں ترقی زیادہ ہیںایک سوال کا جواب دیتے ہوئے سابق کنونیئر نے کہا کہ تحریک انصاف کے دروازے ہر شخص کے لئے کھلے ہیں شرط صرف اتنی سی بے کہ اس کے دامن پر لوٹ مار ،قوم پرستی ،فرقہ پرستی اورعلاقائی تعصف کے دھبے نہ ھوں ،پارٹی میں آنے کے بعد دھڑ بندی کرنے والے ایسے فسادی شخص کے لئے تحریک انصاف کے دروازے بندہونگے ماضی کی حکومتوں کی غلط پالیسیوں سے ملک پروان چڑھنے کی بجائے تنزلی کا شکار ہے۔
اُنکا کہنا تھا کہ وزیر اعظم عمران خان نے مشکل حالات میں حکومت کی باگ ڈور سنبھالی ہے ۔مہنگائی عروج پر،روپے کی قدر بہت گر گئ ہے ۔ لوگ پریشان ہیں۔ملک مقروض ھے۔عمران خان اور ان کی ٹیم ملک کو معاشی بھنور سے نکالنے انتھک محنت کر رھی ہے۔ ان حالات میں پی ٹی آئی کے ممبران اسمبلی کو شوخیاں بگھارنے کی بجائے اپنے اپنے حلقے کے لوگوں کے مسائل حل کرنا چاہئے ہمارے غریب لوگ پریشان ہیں۔پارٹی کے ورکروں کو بھی چاہئے کہ عوام کے ساتھ وابسطہ رہیں ۔ اور جس جس سیاستدان نے ملک کو تباہ کیا وہ امریکہ اور بھارت کے ایجنٹ ہے ان کے اشاروں پر ملک کو برباد کیا گیا اور اللہ تعالیٰ کا کرنا ملک کا اقتدار عمران خان کے کندھے پر انے کے بعد ملک کو بچا لیا ہے تاریخ میں پہلی مرتبہ ہوا کرپشن میں پچاس فیصد کمی ایا ہے اور ادارے مضبوط ہورہا ہے انہوں نے شیخ رشید کی تعریف کرتے ہوئے پاکستان ریلوے کو نظام ٹھیک کیا اور شاہ محمود قریشی نے ملک کو خارجہ پالیسی بھی راستے پر لایا ہے سابقہ حکومت کی نااہلی خارجہ پالیسی نہ ہونے کی وجہ سے پاکستان کو پوری دنیا میں تنہا کردیا تھا انہوں نے کہا کہ سابقہ حکومت سے ہماری پارٹی کے خرچے بھی ستر فیصد کم ہیں اور ملکی خزانے کو بھی بچایا گیا ہے۔

  •  
  • 5
  •  
  •  
  •  
  •  
    5
    Shares

About TNN-GB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*