تازہ ترین

ضلع کھرمنگ کے وسیع ترین وادی غاسنگ میں سیاحت کے حوالے سے بیش بہا مواقع حکومتی توجہ کے منتظر۔

کھرمنگ(رپورٹ : ذاکر حسین میر )ضلع کھرمنگ میں سیاحت کے فروغ اور تجاویز طلب کیا جارہا ہے لیکن ضلع کھرمنگ تمام علاقوں سے وسیع سماجی اور ترقیاتی حوالے سے پسماندہ ترین وادی غاسنگ میں سیاحت کے بیش بہا مواقع موجود ہیں جس کی طرف آج تک محکمہ سیاحت نے توجہ دینے تک کی زحمت نہیں کی۔ویسے تو ضلع کھرمنگ کا ہر وادی سیاحت سے اپنی الگ پہچان رکھتی ہے لیکن سیاحت کی فروغ کیلئے نہایت ہی کم سرمایہ کے ساتھ مواقع پیدا کرنے سہولت صرف وادی غاسنگ میں پایا جاتا ہے۔
موضع غاسنگ کھرمنگ ضلع کھرمنگ کا وسیع و عریض اور غاسنگ نالہ ٹاون ایریا سے بھی وسیع و عریض اور بہت ہی دلفریب اور خوبصورت ہے جہاں قدرتی حسن اور فطرتی مناظر آنے والوں کو اپنے سحرمیں جکڑلیتے ہیں۔غاسینگ نالے میں کئی مقامات ہے جس میں ژھیرمین، ربکھا ، چھوچن میں ہزاروں ایکڑز زمینیں کاشت کاری بھی کی جاتی ہے اور یہاں زراعت اور نچرل سیاحت کیلئے کثیر مواقع موجود ہیں۔اس کے علاوہ یہاں لاکھوں کے تعداد میں خوبانی ، بیر وغیرہ کے درختوں سے مالا مال ہے۔ چھومک ، ژھوژھوق ، خومبوکھا ،بومبوکھور، خلنگ تانگمہ ، چھوچھت اور تارغن قدرتی گھنے اور خوبصورت جنگلات سے مالا مال ہے شایدہی بلتستان میں ایسے جنگلات بہت ہی کم ہے اور جنگل کی خوبصورتی اپنی سیاحوں کو اپنی طرف موہ لیں گے۔ اور ایک دلچپ جگہ جس کو مقامی زبان میں فرانگپی پیو(فرہنگی یادگار) اور ٹوررزم والے کاسٹور پیک سے جانے جاتے ہے جو سطح سمندر سے تقریبًا سولہ ہزار (16000) فٹ کی بلندی پر واقع ہے ۔مقامی بزرگوں کے بقول یہاں انگریزوں کے دور میں انہوں نے جگہ بلندی پر ہونے کی وجہ سے اپنا پوسٹ بنایا ہواتھا تو اس وقت انگریز کو فرانگ کہتے تھے اسی مناسبت سے اسکو فرانگپی پیو کے نام سے جانا جاتا ہے۔ معلومات کے مطابق اس مقام کا سکردو ٹوررزم والوں کے پاس ریکارڈ بھی ہے اور ہر تین سے پانچ سال بعد یہاں کے وزٹ بھی کرتے ہے اور یہاں ایک سکہ کہیں چھپا کے رکھا ہے اسکو تبدیلی بھی کرتے ہیں۔
غاسنگ نالہ ٹھنڈے میٹھے چشموں کی سرزمین ہے جہاں صاف شفاف ندی نالے کے حسن کوچارچاند لگادیتے ہیں۔ غاسنگ نالہ سیاحت کے حوالے سے موزوں ترین اس لئے بھی ہے کہ یہ مرکزی شاہرائے کرگل سے صرف 30 سے 40 منٹ کے فاصلے پر ہے۔ غاسنگ میں سیاحت کو فروغ دینے کے لئے عوامی حلقوں کی جانب سےچند تجاویز بھی پیش کی ہے جس میں سب سے پہلے تو 8کلومیٹر کے قریب نالہ روڈ کی تعمیر کے حوالے سے چند ضروی اقدامات اٹھانے کی ضرورت ہے۔ یہاں پہلے ہی دو کلومیٹر روڈ موجود ہیں لیکن حکومتی عدم توجہی کے سبب خستہ حالی کے شکار ہیں۔ دوسری بات یہ ہے کہ محکمہ جنگلات سے بھی مدد لے کر غاسنگ کے گھنے اور خوبصورت جنگل کو پارک قرار دیاجاسکتاہے اور وہاں پر کمپینگ سمیت مختلف سیاحتی پروگرامز کاانعقاد بھی ممکن بنایاجاسکتاہے۔اگر حکومت اس طرف معمولی توجہ دیتے ہیں تو کھرمنگ میں سیاحت کا ایک نیا دورشروع ہوسکتاہے۔ جس سے نہ صرف ہمارے علاقے کی ایک بین الاقوامی پہچان ہوگی بلکہ لوگوں کو روزگار کے مواقع بھی فراہم ہونگے۔

  •  
  • 11
  •  
  •  
  •  
  •  
    11
    Shares

About TNN-ISB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*