تازہ ترین

سپریم کورٹ نے سابق ایم ڈی پاکستان ٹیلی ویژن عطا الحق قاسمی پر بم گرا دیا۔

اسلام آباد(ویب ڈیسک) سپریم کورٹ نے سابق ایم ڈی پاکستان ٹیلی ویژن عطا الحق قاسمی کی تقرری غیر قانونی قرار دے دی۔عدالت عظمی کے دو رکنی بینچ نے آج اپنا محفوظ فیصلہ سنا دیا۔ عدالت نے اپنے فیصلہ میں قرار دیا کہ عطا الحق قاسمی نے بطور ایم ڈی جو احکامات دیئے وہ غیرقانونی ہیں۔
عدالت نے کہا کہ عطا الحق قاسمی نے جتنی تنخواہ اور مالی فوائد حاصل کیے وہ غیر قانونی ہیں۔ عدالت نے قاسمی کو کسی بھی سرکاری عہدے کےلیے بھی تاحیات نااہل قرار دے دیا۔سپریم کورٹ:عطاالحق قاسمی 27کروڑ واپس کریں کیس ختم کردیتے ہیں۔عدالت نے کہا ہے کہ عطا الحق قاسمی نے اپنے دور میں 197.86 ملین روپے حاصل کیے۔ عدالت نے حکم دیا کہ یہ تمام اخراجات پرویزرشید، اسحاق ڈار اور فواد حسن فواد سے لیے جائیں۔
عطا الحق قاسمی کی تقرری کے وقت پرویزرشید وفاقی وزیر براے اطلات تھے، سحاق ڈار وزیر خزانہ اور فواد حسن فواد وزیر آزم کے پرنسپل سیکرٹری تھے۔فیصلہ جسٹس عمر عطا بندیال نے پڑھ کر سنایا جسے عدالت نے 12 جولائی 2018 کو محفوظ کیا تھا۔ عدالت نے ایم ڈی پی ٹی وی تقرری ازخود نوٹس کیس نمٹا دیا۔

  •  
  • 4
  •  
  •  
  •  
  •  
    4
    Shares

About TNN-ISB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*