تازہ ترین

ڈبلیو ڈبلیو ایف کے وفد کا ضلع نگر میں قدرتی ماحول کی تحفظ اور اضافے کے حوالے سےعمائدین سے ملاقات۔

نگر ( اقبال راجوا) ڈبلیو ڈبلیو ایف کے وفد کا ایل ایس او شینبر چھلت اور علاقے کی عمائدین کے ساتھ قدتی ماحول کی تحفظ اور اضافے کے حوالے سے تفصیلی بات چیت۔ تفصیلات کے مطابق ڈبلیو ڈبلیو ایف کا ایک نمائندہ وفد سعید عباس بیتھام کے ہمراہ مقامی معاون تنظیم شینبر رورل سپورٹ آرگنائزیشن چھلت نگر SRSONکے ممبران بورڑ اورعلاقے کے عمائدین کے ساتھ ایک اہم ملاقات کی، ملاقات میں ضلع نگر اور ہنزہ میں سب سے بڑے قدرتی سہولیات سے بھر پور علاقہ شینبر میں قدرتی ماحول کی بقا او ر اس کے تحفظ کے لئے روایتی طریقوں اور جدید طریقہ کار سے اقدامات پر گفتگو ہوئی۔ کیونیٹی افراد کی نمائندگی کرتے ہوئے نگر پریس کلب کے صدر اقبال حسین ،نمبر دار اعلیٰ مالک اشدر،زوار محمد شفا، چئیرمین ایل ایس اوصوبیدار ریٹائرڑ شاہجہان،سلیم عباس،سابق چئرمین SRSON زوار سلیمان نے گفتگو کی۔ کمیونیٹی کے نمائندہ افراد نے وفد سے اپنی گفتگو میں بتایا کہ ہماری روایات میں علاقے کے قدرتی ماحول کے بقاء اورتحفظ کے لئے کمیونیٹی کی جانب سے کوئی منصوبہ باقاعدگی کرنے کی مثال sal 1980تک موجود نہیںہے البتہ علاقے کے بنجر زمینوں کی آباد کاری کے لئے صدیوں پرانے زمانے میں دور دراز علاقوں سے کوہل نکال لئے گئے اور زمین کو زیر آب کرنیکے بعدقابل کاشت اور اپنے لئے منفعت حاصل کرنے کے لئے روایتی اوزار اور ہتھیاروں کے زریعے کھیتی باڑی کی جاتی رہی جو آج تک کسی نہ کسی شکل میں موجود ہے۔ پھر روایتی طریقوں سے پھلدا ر درخت اگائے گئے یوں اپنی ضرورت پوری کی جاتی رہی ہے۔ 1990گلگت بلتستان کی تاریخ میں پہلی مرتبہ بر ویلی کنزر ویشن کمیٹی نامی تنظیم کا آغاز کی گیا جو اپنی پوری کامیابیوں کے ساتھ آج تک موجود ہے۔کمیونٹی نمائندوں نے WWFکے وفد سے اپیل کیا کہ قدرتی ماحولیات کے افزائش ،بقاء اور تحفظ کے لئے ضروری ہے کی ایل ایس او شینبر کی معاونت سے تنظیمات کے ماحولیات سے دلچسپی رکھنے والے فعا ل کر کنوں پر مشتمل تحفظ ماحول کمیٹی کا قیام عمل میں لایا جائے جو علاقے میں عوامی سطح پر شعور قدرتی ماحول کی افادئیت کا احساس بیدا کرنے اور ماحولیات کمیٹی کے زریعے کمیونیٹی افراد کی تعلیم وتجربے کو بڑھانے کے لئے کام کرے۔ کمیونیٹی فعال کردار ادا کرنے ولے افراد اور سماجی کارکنان کی استعداد کار بڑھانے کے لئے خصوصی آگاہی اور تربیتی پروگرام کا انعقاد کرایاجائے۔ ان سماجی کارکنان نے سرکاری ماحولیاتی تحفظ دینے کے منصوبوں کو صرف سرخ فیتے کاٹنے کی حد تک ہی قرار دیا۔جبکہ انہی نمائندوں نے دنیا کی تیز رفتار ترقی اور پیسے دولت کی تعاقب کو قدرتی ماحول اور انسانی حیات کے لئے بھی خطرناک قرار دیا۔WWF کے نمائندے سعید عباس بیتھام نے بتایا کہ وہ ایل ایس او کی تعاون سے اس سال کمیونیٹی کی طرف سے فراہم کردہ اراضی پر بیس ہزار ڈنڈے لگائیں گے تاکہ ایک ہی قطعہ زمین پر درختوں کو روایتیطریقوں سے اگایا جا ئے اور اس منصوبے کے عوض LSOکو فی ڈنڈہ تیس روپیے دئیے جا ئیں گے۔ معروف ٹی وی چینل کی رپورٹر نے قدرتی ماحول کے تحفظ ،مذید افزائش اور روایتی طور طریقوں سے تعلق کمیونیٹی افراد سے انٹڑویو بھی کر لیا۔

  •  
  • 5
  •  
  •  
  •  
  •  
    5
    Shares

About TNN-ISB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*