تازہ ترین

محکمہ تعلیم ضلع غذر میں انسانی حقوق اور لیبر لاء کی سنگین خلاف ورزی کا انکشاف۔

غذر(غلام محی الدین) ڈسٹرکٹ غذر گلگت بلتستان میںانسانیت سوز اور لیبر لاء کی سنگین خلاف ورزی کا عجب کہانی منظر عام پر آ گئی۔ تفصیلات کے مطابق گرلز کالج گاہکوچ بالا میں غربت کی ستائے ایک استانی کو پچھلے سات سالوں سے 40 روپے روزانہ کی بنیاد پر نوکری پر رکھا گیا اور انکو صرف ایک سال کی تنخواہ دی گئی ہےاور جب ڈی ڈی صاحب دورے پہ آتے تھے تو انکو واشروم میں بند کیا جاتا تھا۔اسی طرح ایسے 4500 ملازم ہے جو کام تو کرتے ہیں لیکن پیسہ کوئی اور کھاتا ہے
اس خبر کو سوشل میڈیا پر وائرل ہونے کے بعد ایک ہنگامہ پربا ہوگیا عوام گلگت بلتستان کی حکومت اور محکمہ تعلیم اور گلگت بلتستان میں انسانی حقوق کیلئے کام کرنے والے این جی اوز سے سوال کر رہے ہیں کہ آیا گلگت بلتستان میں اس قسم کے عجیب غریب انسانیت سوز واقعات پر خاموشی کیوں ہے۔

  •  
  • 6
  •  
  •  
  •  
  •  
    6
    Shares

About TNN-Gilgit

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*