تازہ ترین

آئینی حیثیت کے بارے سپریم کورٹ کا فیصلہ عوامی امنگوں کے مطابق ہونا چاہیے، آرڈر میں ترمیم قبول نہیں،مولانا سلطان رئیس

گلگت (تحریر نیوزنیٹ ورک)گلگت بلتستان کی آئینی حیثیت کے بارے سپریم کورٹ آف پاکستان کا فیصلہ عوامی امنگوں کے مطابق ہونا چاہیے کسی آرڈر میں ترمیم یا مک مکا کے ذریعے کسی فیصلے کو عوام ہرگز قبول نہیں کریں گے۔1999 سپریم کورٹ آف پاکستان کے فیصلے پر عمل درآمد کے حد تک عوامی ایکشن کمیٹی نے وکلاء برادری کا اعلان کیا ہے اگر اس پر عملدرآمد ہوتا ہے تو خیرمقدم کیا جائے گاعلاوہ کسی فیصلے کی صورت عوامی ایکشن کمیٹی بھرپور مزاحمت کریگی.ان خیالات کا اظہار مولانا سلطان رئیس چئیرمین عوامی ایکشن کمیٹی نے اپنے بیان میں کیا انہوں نے مزید کہا کہ گلگت بلتستان میں موجود سیاسی و مذہبی جماعتوں کی ذمداری بنتی ہے کہ پارٹی منشور سے بالاتر ہو کر گلگت بلتستان کے بہتر مستقبل کے سپریم کورٹ آف پاکستان سے بہتر فیصلے کا مطالبہ کرے.انہوں نےکہا کہ سن نے میں آرہا ہے کہ آرڈر 2018 کو ترمیم کے ساتھ قبول کرنے کیلئے گلگت بلتستان کے سیاسی و مذہبی جماعتوں پر دباؤ ڈالا جارہا ہے جسے کسی صورت برداشت نہیں کیا جائے گاانہوں نےکہا کہ گلگت بلتستان کے معروضی حالات کو مدنظر رکھتے ہوئے گلگت بلتستان کے عوام کیلئے ہیٹنگ کولنگ اور لائٹننگ کیلئے مکمل طور پر بجلی فراہم کی جائے جو کہ حکومت کی ذمداری بنتی.

  •  
  • 4
  •  
  •  
  •  
  •  
    4
    Shares

About TNN-ISB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*