تازہ ترین

سینئر وزیر اکبر تابان اور اسسٹنٹ کمشنر سکردوکے درمیان ہاتھا پائی کی اندورن کہانی منظر عام۔

گلگت(محبوب خیام)گلگت گزشتہ دنوں سرفرنگا مقابلے کی اختتامی تقریب میں سینئر وزیر اکبر تابان اور حال ہی میں ذمہ داریاں سنبھالنے والے اسسٹنٹ کمشنر کے درمیان پہلے تلخ کلامی پھر ہاتھا پائی کی خبر منظر عام پر آگئی تھی۔ سوشل میڈیا پر بتایا گیا تھا کہ اسسٹنٹ کمشنر نے سینئر وزیر کو اس اختتامی تقریب سے روکنے کی کوشش کی تھی جس پر اکبر تابان اور اے سی کے درمیان گرما گرمی کے بعد سینئر وزیر نے اے سی کو زدوکوب کیا تھا۔
باوثوق ذرائع کے مطابق جھگڑا سینئر وزیر کو روکنے پر نہیں بلکہ سینئر وزیر کے صاحبزادے اور اس کے درجن بھر دوستوں کا بغیر کارڈ زبردستی تقریب میں گھسنے کی کوشش پرہواا تھا ذرائع کا کہنا ہے کہ اس تقریب میں محدود مہمانوں کے لئے نشتیں رکھوائی گئی تھیں اگر مدعو کئے گئے مہمانوں کے علاوہ بھی لوگوں کو تقریب میں جانے کی اجازت دی جاتی تو تقریب بد نظمیں کا شکارہو سکتی تھی تقریب میں نظم ضبط برقرار رکھنے اور غیر متعلقہ افراد کے داخلے کو روکنے کے لئے اے سی خود ڈیوٹی پر موجود تھے۔
اس دوران اکبر تابان تقریب میں شرکت کے لئے آئے تو انہیں مکمل پروٹوکول کے ساتھ جانے کی اجازت دی گئی جبکہ ان کے صاحبزادے جو اپنے درجن بھر دوستوں کے ہمراہ بغیر کارڈ زبردستی تقریب میں شرکت کرنا چاہتے تھے کو اے سی نے بغیر کارڈ اندر جانے سے روکتے ھوئے معذرت کرلی جس پر وزیر موصوف جلال میں آگئے پہلے گالم گلوچ کی پھر جب جی نہیں بھرا تو ڈیوٹی پر مامور اے سی کو زدوکوب کرکے نہ صرف اپنا غصہ ٹھنڈا کیا بلکہ اپنے عمل سے ثابت کیا کہ وزیر وزیرہو تاہے اور ان سے پنگا لینے والوں کا یہی انجام ھو تا ھے۔

  •  
  • 45
  •  
  •  
  •  
  •  
    45
    Shares

About admin

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*