تازہ ترین

اہلیان شگر نے سرفہ رنگا کار ریلی سے پہلے ایونٹ کا نام تبدیل کرنے کا مطالبہ کردیا۔

شگر(نامہ نگار) صحرائی کار ریلی کا انعقاد ضلع شگر میں ہونے کے بائوجود شگر کے نام اور شگر کو نظر انداز قابل قبول نہیں۔ اگر ریلی کا انعقاد شگر میں کرنا ہے تو ریلی کا نام شگر کولڈ ڈیزرٹ ریلی شگر رکھا جائے اور شگر کے نام کیساتھ پروگرام کی تشہیر کیا جائے۔ورنہ شگر کی عوام خاموش ہرگز نہیں رہیں گے۔ گذشتہ سال ریلی میں شگر کو یکسر نظرانداز کیا گیا تھا ،اور شگر کی زمین استعمال ہونے اور شگر کی عوام نے تکالیف برداشت کرنے کے بائوجود شگر انتظامیہ اور شگر کے اداروں کا شکریہ تک اداکرنا صوبائی حکومت ،سرکاری اداروں اور ریلی انتظامیہ نے توہین سمجھا۔اب کی بار ایسا نہیں چلے گا۔ڈپٹی کمشنر شگر کی جانب سے سرفہ رنگا کولڈ ریلی کی انعقاد اور تیاری کے سلسلے میں منعقدہ اجلاس میں عمائدین شگر ڈی سی شگر کے سامنے پھٹ پڑے۔اور گذشتہ سال ہونے والے نظرانداز کیخلاف بول پڑے۔ڈپٹی کمشنر شگر ذاکر حسین کی صدارت میں عمائدین شگر کا اجلاس ڈپٹی کمشنر شگر کی آفس میں منعقد ہوا ، جس میں مبر اسمبلی عمران ندیم ،سابق صوبائی وزیر راجہ اعظم خان،سابق ممبر ضلع کونسل حاجی وزیر فداعلی ،ایس پی شگر ، اے سی شگر سمیت شگر کی عمائدین اور سیاسی نمائندوں نے شرکت کی۔ اجلاس میں ڈپٹی کمشنر شگر نے اس سال سرفہ رنگا کار ریلی کے حوالے سے شرکاء کو آگاہ کیا۔جس پر عمائدین شگر نے سرفہ رنگا کولڈ ڈیزرٹ ریلی انعقاد کو خوش آئبد قرار دیا تاہم لوگوں کی تحفظات سے ڈی سی شگر کو آگاہ کیا۔شرکاء کا کہنا تھا کہ سرفہ رنگا شگرایک گائوں کا نام ہے تاہم یہ ریلی کا انعقاد ژھے تھنگ نامی صحراء میں ہورہے ہیں ۔سرکاری طور اس ریلی کی تشہیر میںمیں سرفہ رنگا سکردو کے نام سے کیا جارہا ہے جبکہ انتظامات بھی سکردو کے پاس ہے ۔ جوکہ قابل قبول نہیں۔گذشتہ سال بھی شگر کو مکمل نظرانداز کی گیا تھا ۔ اور شگر کی عوام کو طرح طرح کی پابندیاں لگاکر مشکلات پیدا کیا گیا تھا۔شگر کی عوام کو اس ایونٹ کی انعقاد کی وجہ سے سخت تکالیف کا سامنا ہوا۔لیکن شگر کی عوام نے خوش دلی کیساتھ اس ایونٹ کا کامیاب بنانے میں انتظامیہ کا ساتھ دیا لیکن سرکاری حکام اور ریلی انتظامیہ کو شگر کی عوام کا شکریہ تک اداکرنے کی توفیق نہ ہوئی۔اس ایونٹ میں شگر کے دیگر سرکاری ادارے مقروض ہوگئے تھے تاہم ایونٹ کا نام پر آنے والے رقوم کا کوئی پتا نہ چل سکا۔ جس کا بالواسطہ متاثر شگر ہوئے۔جبکہ حکام نے اس ایونٹ کے نام بھی تبدیل کئے جوکہ قابل قبول نہیں۔ اگر ایونٹ کا انعقاد چاہتے ہو تو اس ریلی کا نام شگر کولڈ ڈیزرٹ ریلی اور اس کی انتاظامات شگر کے پاس ہو ورنہ ہمیں قبول نہیں۔ ڈپٹی کمشنر نے شرکاء کو تحفظات کو حکام باا تک پہنچانے اور دور کرنے کی یقین دہانی کرائی۔

  •  
  • 113
  •  
  •  
  •  
  •  
    113
    Shares

About admin

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*