تازہ ترین

میں گلگت بلتستان ہوں۔۔۔

میں کے ٹو ہوں ، مشبروم ہوں، نگا پربت ہوں، دیو سا ئی ہوں، شنگریلا ہوں میں ہوں گلگت بلتستان پاکستان کے سر کے تاج میں مثل جھومر۔آج 25 جولائی ملک بھر میں ـــــــخلق خدا پاکستان کے مستقبل کا فیصلہ کرنے کے لیے اپنی حق رائے دہی کا استعمال کررہی ہے مگرمیں گلگت بلتستان اس حق رائے دہی سے محروم ہوں گزشتہ سات د ہائیوں سے اپنے اس قومی فریضے سے محروم ہوں ۔میرے یہاں کے پہاڑوں، دریاؤں ، جھیلوں کی وہی پہچان ہے جو پاکستان کے دیگر حصوں میں موجود پہاڑوں، دریاؤں ، جھیلوں کو حاصل ہے مگر یہاں کے باشندوں کو وہ حقوق میسر نہیںجو دیگر حصوں میںرہنے والے پاکستانیوں کو حاصل ہے جوایک عام پاکستانی کو حاصل ہے یہاں کے دیگر تمام چیزیں مکمل پاکستانی و باعث فخرپاکستان ہے سوائے یہاں کے باشندے جومتنازع اور غیرمکمل آئینی پاکستانی ہے۔ میںکسی کوپاکستان کا وزیر اعظم منتخب نہیںکرسکتا نہ ہی کوئی میرے مسائل کے حل کے لیے قومی اسمبلی اور پارلیمنٹ میں آواز بلند کرسکتا ہے میں قومی اسمبلی اور پارلیمنٹ کا امید وار نہیںبن سکتا میں اپنے فیصلے خود نہیںکرسکتا میں گلگت بلتستان ہوں۔میں سی پیک کا گیٹ وے ہوںمیں ہی پاکستان کےدیرینہ دوست چین کا ہمسایہ ہوں۔میں پاکستان کا محافظ ہوںمیرے جوان پاکستان کی حفاظت کے لیے اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کرتےرہیںہے اورہر دم ملک کی حفاظت میں جان کی بازی لگانے کے لیے تیارہے میرے جوان با صلاحیت و لا جواب ہے مگر ان کی صلاحیت میں اضافے کے لیے مواقعے نہایت ہی کم ہے۔یہاں میڈکل کالج اور انجیئر نگ یو نیورسٹی نہیں نہ ہی جدید صحت کے مراکز موجودہے۔میرے جوان وطن کی محبت سے سر شار و باوفاہے۔ میں منتظر ہوں اس وقت کا جب میرے باشندوں کو وہ حقوق میسرہوجو دوسرے پاکستانیوں کو حاصل ہے میں منتظر ہوں اس وقت کا جب میں اپنے فیصلے خود کر سکوں۔میںکے ٹو ہوں ، مشبروم ہوں، نگا پربت ہوں، دیو سا ئی ہوں، شنگریلا ہوں ،میں گلگت بلتستان ہوں میں پاکستان ہوں۔

تحریر: ذولفقار علی احسان

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

About ISB-TNN

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*