تازہ ترین

پیپلزپارٹی کے رہنما شہزاد آغا کی گرفتاری کے خلاف سکردو میں احتجاجی مظاہرہ۔ آغا علی رضوی کا خوفناک اعلان۔

سکردو(نامہ نگار) سابق قوم پرست اور موجود پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما غلام شہزاد آغا کو جج کیساتھ بدتمیزی کی پاداش میں گھر سے گرفتار لیا۔ تفصیلات کے مطابق ضلع کھرمنگ کی عدالت نے اُنہیں کسی کیس میں طلب کیا تھا جس پر کہا یہ جارہا ہے کہ اُنہوں نے کچھ نامناسب بلتی زبان میں جج کیلئے جملے استعمال کئے۔ جس پر ضلع کھرمنگ کی عدالت نے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کردیا۔ یاد رہے حالیہ
حقوق کی تحریکوں میں غلام شہزاد آغا عوامی ایکشن کمیٹی کے پلیٹ فارم سےبہت ذیادہ فعال رہے ہیں ۔کہا یہ جارہا ہے کہ شہزاد آغا کی گرفتاری کا حکم نامہ جاری کرنے والے جج کا تعلق بھی بلتستان کے علاقہ روندو سے ہے۔ اُنکی گرفتاری کے خلاف سکردو میں سول سوسائٹی اور دیگر جماعتوں نے بھر احتجاج کیا اور احتجاج مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے مقررین کی اُنکی گرفتاری کو انتقامی کاروائی قرار دیا ہے جبکہ ممتاز عالم دین اور سیکرٹیری جنرل مجلس وحدت المسلمین گلگت بلتستان آغا علی رضوی نے شہزاد آغا کو فی الفور رہا نہ کیا تو کھرمنگ کی طرف لانگ مارچ کرکے اور طولتی تھانے کو آگ لگا نے کا اعلان کیا ہے۔

یاد رہے مظاہرے میں پاکستان پیپلزپارٹی کے کسی بھی مقامی رہنما سے اُن سے اظہار ہمدردی کرنے کیلئے شرکت نہیں کی۔

About ISB-TNN

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*