تازہ ترین

مسئلہ کشمیر کے حل تک گلگت بلتستان کو صوبہ نہیں بنایا جاسکتا ہے۔ جعفراللہ خان

گلگت (ڈسٹرک رپورٹر ) ڈپٹی سپیکر جعفر اللہ خان نے کہاہے کہ پیپلز پارٹی اور متحدہ اپوزیشن والے جی بی کو صوبہ بنانے کے نام پر عوام کو گمراہ کرنے کا سلسلہ بند کریں۔ مسئلہ کشمیر کے حل تک گلگت بلتستان کو صوبہ نہیں بنایا جاسکتا ہے اگر خطے کو صوبہ بنانا اتنا آسان ہوتا تو پیپلز پارٹی والوں نے اپنے دور حکومت میں جی بی کوملک کا صوبہ کیوں نہیں بنایا۔ مسلم لیگ ن کی حکومت عوام کو ایسا پیکج دے گی جو تمام مکاتب فکر کے لوگوں کو قابل قبول ہوگا۔ ڈپٹی سپیکر جعفر اللہ خان نےمقامی میڈیا رپورٹرسے بات کرتے ہوئے کہاہے کہ امجد ایڈووکیٹ حق ملکیت اور حق حاکمیت کے نام پر سادہ لوح عوام کو بیوقوف بنانے کی ناکام کوشش کررہے ہیں۔ امجد حسین ایڈوکیٹ حق ملکیت اور حق حاکمیت کے جھوٹے نعرے لگانے کے بجائے خود غریب لوگوں کے زمینوں پر قبضے کرنا چھوڑ دیں ۔ پیپلز پارٹی نے اپنے دور میں جی بی کو لوگو ایریا بنادیا تھا اب امجد ایڈووکیٹ اور پیپلز پارٹی کے 4 رکنی ٹولہ گلگت بلتستان کو قتل گاہ بنانا چاہتے ہیں خطے کا پائیدار امن حکومت کی اولین ترجیحات میں شامل ہیں۔ اگر کسی نے عوام کو ورغلا کر پرامن حالات کو خراب کر کے خطے کی تعمیروترقی روکنے کی کوشش کی تو سخت ایکشن لیا جائے گا۔ انہوں نے کہاکہ متحدہ اپوزیشن کے نام پر حکومت کے خلاف احتجاج ٹوپی ڈرامہ تھا جی بی کی 21 جماعتیں مل کر بھی اتحاد چوک میں 4 سو لوگوں کو جمع نہ کرسکیں عوام نے متحدہ اپوزیشن کو لفٹ نہیں کرائی۔ انہوں نے کہاکہ وفاقی حکومت نے جی بی کے آئینی معاملات کوزمین حقائق کی روشنی میں سلجھا کر جی بی اسمبلی سمیت اور عوام کو بااختیار بنایا جارہا ہے ہم ماڈل اور بااختیار اسمبلی کی بات کررہے ہیں بہت جلد عوام خوشخبری سنیں گے ۔مسلم لیگ ن جی بی کے عوام ایسا سیٹ اپ دے گی جو صدیوں بعد بھی یاد رکھا جائے گا۔

About TNN-SKARDU

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*