تازہ ترین

گلگت بلتستان آئینی صوبے کے کیا نقصانات ہیں ؟ ڈپٹی اسپیکر جعفراللہ خان نے واضح کردیا۔

گلگت (ڈسٹرک رپورٹر) ڈپٹی سپیکر قانون ساز اسمبلی گلگت بلتستان جعفراللہ خان نے اپوزیشن جماعتوں سے آئینی اصلاحات کے معاملے پر مشورہ مانگ لیا۔ مقامی میڈیا نمائندوں سے بات کرتے ہوئے اُنکا کہنا تھا کہ ہمارے نیک مشورے پر اگر کوئی عمل نہیں کرتے تو ہماری صحت پر کوئی فرق نہیں پڑتا ہے کیونکہ ہمار ا مقصد گلگت بلتستان کے عوام کو ایک بہترین سیٹ اپ دینا ہے۔ اُنکا کہنا تھا کہ پیپلزپارٹی نے اسلام آباد میں بیٹھ کر 2009 کا پیکیج دیاہمارے وزیر اعظم نے کہا ہے کہ تمام سٹیک ہولڈرز کو اعتمادمیں لیکر سیٹ اپ کا اعلان کیاجائے گا۔انہوںنے مزید کہا کہ مسئلہ کشمیر کو کسی طور پر بھی نظرانداز نہیںکیا جاسکتا اور نہ ہی کشمیریوں کی قربانیوں کو رائیگاں جانے دیں گے۔ اُنکا کہنا تھا کہ گلگت بلتستان کو مکمل آئینی صوبہ بنایا گیا تو انڈیا مقبوضہ کشمیر کو صوبہ بناکر مسئلہ کشمیر کو ختم کرکے کشمیریوں کیساتھ زیادتی کریگا اور اس مسئلے پر جن لوگوں نے قربانیاں دی ہیں وہ رائیگاں جائے گی۔اُنہوں نے خواہش کا اظہار کیا کہ شوق تو ہمارا بھی ہے قومی اسمبلی اور سینیٹ میں مکمل نمائندگی ملے لیکن ایسا ممکن نہیں لہذا جہاں ہم نے ستر سال برداشت کئے ہیں وہیں مزید بھی برداشت کیاجائے اور آہستہ آہستہ پاکستان میں ہی شامل ہونے کا انتظار کریںکیونکہ ہماری منزل پاکستان ہی ہے۔

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

About ISB-TNN

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*